ملک میں یوریا اور گندم کی دستیابی کو یقینی بنایا جائے، وزیراعظم

اسلام آباد: وزیراعظم شہبازشریف نے کہاہے کہ اسمگلنگ کو روکنے کے لیے سخت بارڈر کنٹرول وقت کی اہم ضرورت ہے۔ مارکیٹ میں یوریا اور ڈی اے پی کی مستحکم اور ارزاں نرخوں پر دستیابی یقینی بنائیں۔ ایسے اقدامات کی ضرورت ہے جس سے ملک گندم کی پیداوار میں خود کفیل ہو۔ وزیراعظم نے ٹاسک فورس کی تشکیل کی ہدایت بھی کردی۔

وزیراعظم شہباز شریف کی زیر صدارت ملک میں گندم اور یوریا کی اسمگلنگ سے نمٹنے کے لیے اعلیٰ سطح کااجلاس ہوا۔ اجلاس میں وزیر داخلہ رانا ثناءاللہ خان، وزیر صنعت و پیداوار سید مرتضی محمود، وزیر خوراک طارق بشیر چیمہ شریک ہوئے، اجلاس میں وزیر منصوبہ بندی احسن اقبال ،وزیر خزانہ مفتاح اسماعیل، وزیرتجارت سید نوید قمر اور متعلقہ اعلی سول اور عسکری حکام نے بھی شرکت کی۔ صوبائی چیف سیکریٹریز، آئی جی پولیس، آئی جی ایف سی اور دیگر اعلی حکام نے ویڈیو لنک کے ذریعے اجلاس میں شرکت کی۔

حکام نے بریفنگ دیتے ہوئے بتایا کہ مارکیٹ میں قیمتوں کو مستحکم رکھنے کے لیے ہر ماہ کے آغاز میں 2 لاکھ ٹن یوریا کی اسٹریٹجک اسٹاک میں دستیابی ضروری ہے۔

وزیراعظم نے ہدایت کی کہ پاکستان کے کسانوں اور عوام کو زیادہ سے زیادہ ریلیف پہنچانے کے لیے ہر ممکن قدم اٹھائیں۔ ملک میں یوریا اور گندم کی دستیابی کو یقینی بنایا جائے۔

وزیراعظم شہباز شریف نے کہاکہ ذخیرہ اندوزی کو روکنے کے لیے مارکیٹ میں طلب اور رسد کا مربوط نظام بنانے کی ضرورت ہے۔ اس سلسلے میں کسی قسم کی کوتاہی برداشت نہیں کی جائے گی۔

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More