الیکشن کمیشن کے فیصلے سے پنجاب حکومت پر کوئی اثر نہیں پڑے گا، مریم اورنگزیب

اسلام آباد: وفاقی وزیر اطلاعات ونشریات مریم اورنگزیب کا کہنا ہے کہ پنجاب میں مخالفین کی تعداد 172 اور ہماری 177 ہے۔ الیکشن کمیشن کے فیصلے سے پنجاب میں اتحادی جماعتوں کی حکومت پر کوئی اثر نہیں پڑے گا۔

اسلام آباد میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے مریم اورنگزیب نے کہا کہ چار سال دونوں ہاتھوں سے ملک کو لوٹا گیا۔ منحرف ارکان نے پی ٹی ائی کی پالیسیوں پر عدم اعتماد کرتے ہوئے انحراف کیا۔ ایک ہفتے پہلے تک عمران خان الیکشن کمیشن پر حملہ آور تھے۔

انہوں نے کہا کہ الیکشن کمیشن کے فیصلے کے بعد ن لیگ اور اتحادیوں پر کوئی فرق نہیں پڑے گا۔ منحرف ارکان الیکشن کمیشن کے فیصلے چیلنج کرنے کا حق رکھتے ہیں۔ بزدار اصل میں وزیر اعلیٰ تھے ہی نہیں اور آج تحریک انصاف پنجاب میں 25 ارکان سے محروم ہوگئی ہے۔

مریم اورنگزیب نے کہا کہ پی ٹی آئی ارکان نے ملک میں معیشت کی تباہی کے خلاف ووٹ دیا۔آج اپنے گریبان میں جھانکنے کا وقت ہے عمران صاحب۔ جس اسمبلی میں بھی عدم اعتماد ہوگا آپ وہاں سے باہر پھینکے جائیں گے ۔ عمران خان نے آئین شکنی کی۔ ارکان کے ڈی سیٹ ہونے پر جشن منانے والوں کو ماتم کرنا چاہیے۔ فارن فنڈنگ کیس کا فیصلہ آٹھ سال سے نہیں آیا ۔منحرف ارکان کا فیصلہ ایک ماہ میں آگیا۔

وزیر اطلاعات نے کہا کہ آٹھ سال سے فارن فنڈنگ کیس کا فیصلہ کس کے دباؤ پر تاخیر کا شکار ہے۔جس طرح یہ فیصلہ ایک ماہ میں آیا۔ فارن فنڈنگ کیس کا فیصلہ ایک دن میں ہونا چاہیے۔مریم اورنگزیب نے الیکشن کمیشن سے مطالبہ کیا کہ جس تیزی سے اس کیس کا فیصلہ آیا اسی طرح فارن فنڈنگ کیس کا فیصلہ دیا جائے۔

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More