نئے الیکشن پر 47 ارب 41 کروڑ روپے کا تخمینہ

اسلام آباد: نئے الیکشن پر سینتالیس ارب اکتالیس کروڑ روپے کا تخمینہ ہے۔ اخراجات کی تفصیل قومی اسمبلی میں پیش کردی گئی۔۔ سیکیورٹی پر پندرہ ارب خرچ ہوں گے۔ الیکٹرانک ووٹنگ کے لیے پانچ ارب ساٹھ کروڑ کا تخمینہ لگایا گیا ہے۔

قومی اسمبلی میں پیش کردہ دستاویزات کے مطابق بیلٹ پیپرز پر چار ارب تراسی کروڑ کا خرچا ہوگا۔ انتخابی عملے کی تربیت پر ایک ارب اناسی کروڑ روپے کے اخراجات آئیں گے۔ پنجاب میں انتخابات کے لیے نو ارب پینسٹھ کروڑ روپے کا تخمینہ لگایا گیا ہے۔ سندھ میں تین ارب پینسٹھ کروڑ روپے خرچ کیے جائیں گے۔ بلوچستان میں الیکشن کے لیے ایک ارب گیارہ کروڑ روپے کی ضرورت ہوگی۔

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More