فارن فنڈنگ کیس میں پی ٹی آئی کی جانب سے التوا کی درخواست خارج

اسلام آباد: الیکشن کمیشن نے فارن فنڈنگ کیس میں پی ٹی آئی کی جانب سے التوا کی درخواست خارج کر دی۔چیف الیکشن کمشنر سکندر سلطان راجا بولے سات سال سے کیس زیر سماعت ہے آپ بار بار التوا مانگتے ہیں اب کوئی التوا نہیں ہوگا۔الیکشن کمیشن نے اکبر ایس بابر کو کیس سے الگ کرنے کی درخواست پر بھی فیصلہ محفوظ کر لیا۔

چیف الیکشن کمشنر سکندر سلطان راجا کی سربراہی میں بینچ نے پی ٹی آئی فارن فنڈنگ کیس کی سماعت کی۔ پی ٹی آئی کی جانب سے غیر ملکی فنڈنگ کیس کی سماعت ملتوی کرنے کی درخواست الیکشن کمیشن نے خارج کر دی ۔ چیف الیکشن کمشنر نے ریمارکس دیئے آپ بار بار التوا مانگتے ہیں ، سات سال سے کیس زیر سماعت ہے اب کوئی التوا نہیں ہوگا۔ الیکشن کمیشن نے سماعت میں التوا کی پی ٹی آئی کی استدعا مسترد کر دی ۔

اکبر بابر کے وکیل احمد حسن نے اپنے دلائل دیتے ہوئے کہا کہ اسکروٹنی کمیٹی نے پی ٹی آئی کی جانب سے اکاؤنٹ چھپانے کی تصدیق کر دی ہے۔ پی ٹی آئی کی اکبر ایس بابر کو کیس سے الگ کرنے کی درخواست پہلے ہی غیر مؤثر ہوچکی ہے اب کمیشن اکبر اکبر بابر کو سماعت سے الگ نہیں کر سکتا کیونکہ وہ کاروائی کا حصہ ہیں۔ الیکشن کمیشن نے پی ٹی آئی درخواست پر فیصلہ محفوظ کر لیا۔ مزید سماعت سترہ مارچ تک ملتوی کر دی گئی۔

الیکشن کمیشن کے باہر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے وزیر مملکت فرخ حبیب کا کہنا تھا کہ ہمیں اسرائیل اور بھارت سے فنڈنگ لینے کے طعنے دینے والے دیکھ لیں کہ ہمیں کون کون سے پاکستانی فنڈنگ دیتے ہیں۔ مریم،بلاول، زرداری، شبہاز شریف سمیت کسی نے ان فارن ڈونرز سے ملنا ہے تو آجائیں۔

درخواست گزار اکبر ایس بابر کا کہنا تھا کہ مجھے کیس سے الگ کرنے کی بار بار درخواستیں دائر ہوتی ہیں۔ کیا مدینہ کی ریاست میں امیر المومنین سوال پوچھنے والے کا منہ بند کرتے تھے یا جواب دیتے تھے۔ مدینہ کی ریاست بنانے کے چکر میں پاکستان کو عیدی امین کا پاکستان بنا دیا گیا کھلم کھلا قانون کی دھجیاں اڑائی جارہی ہیں۔

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More