ای سی سی کی افغانستان اور ایران سے بارٹر ٹریڈ کیلئے قواعد کی منظوری

اسلام آباد:اقتصادی رابطہ کمیٹی نے چینی کی قیمتوں میں اضافے روکنے کیلئے 5 لاکھ ٹن کے اسٹریٹجک ذخائر قائم رکھنے کی منظوری دے دی ۔ وفاقی حکومت مقامی شوگر ملوں سے تین لاکھ ٹن چینی خریدے گی ۔

وفاقی وزیر خزانہ شوکت ترین کی زیر صدارت اقتصادی رابطہ کمیٹی کا اجلاس ہوا ۔ای سی سی نے افغانستان اور ایران کے ساتھ بارٹر ٹریڈ کیلئے قواعد کی منظوری دے دی ۔افغانستان کو گندم کی فراہمی کی اجازت دی گئی ۔

اقتصادی رابطہ کمیٹی نے پاسکو کیلئے 12 لاکھ میٹرک ٹن گندم خریداری کا ہدف مقرر کیا ہے جس کے لیے 65 ارب روپے مختص کرنے کی منظوری دی ۔ چینی کی قیمتوں میں اضافے روکنے کیلئے 5 لاکھ ٹن کے اسٹریٹجک ذخائر قائم رکھنے کی منظوری دی گئی۔ وفاقی حکومت تین لاکھ ٹن جبکہ پنجاب اور سندھ کی حکومتیں مقامی شوگر ملوں سے دو لاکھ ٹن چینی خریدیں گی۔

ای سی سی نے یوٹیلیٹی اسٹورز پر پانچ اشیاء ضروری پر سبسڈی برقرار رکھنے کی منظوری دی ۔ وزارت خزانہ کےمطابق آٹا، گھی، چینی ، چاول اور دالوں پر سبسڈی دی جائیگی۔سبسڈی 24 فروری سے 31 مارچ تک جاری رہے گی ۔فروری کے پہلے 23 دنوں کی سبسڈی سے متعلق وزارت قانون سے رہنمائی لینے کا فیصلہ کیا گیا ہے ۔

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More