منحرف ارکان کی نااہلی، سماعت 28 اپریل کو مقرر

اسلام آباد: منحرف ارکان کی نااہلی کے لیے الیکشن کمیشن میں سماعت مورخہ 28 اپریل کو ہو گی ۔ تمام ممبران اور متعلقہ سیاسی پارٹی کونوٹس جاری کئے گئے ہیں ۔

الیکشن کمیشن کے اعلامیہ کے مطابق منحرف ارکان کی نااہلی کے لیے الیکشن کمیشن میں سماعت مورخہ 28 اپریل کو ہو گی ۔قومی اسمبلی کے 20 ممبران کے خلاف اسپیکر نیشنل اسمبلی نے آرٹیکل 63(A) کے تحت ڈکلریشن 14اپریل کو چیف الیکشن کمشنر کو بھجوائے جبکہ صوبائی اسمبلی کے 26 ممبران کے خلاف اسپیکر پنجاب اسمبلی نے ڈکلیریشن 20 اپریل کو بھجوائے۔

ای سی پی اعلامیہ میں کہا گیا ہے کہ ان تمام ممبران کو مورخہ 6 مئی 2022 کے لئے نوٹسز جاری کر دیے گئے ہیں جبکہ متعلقہ سیاسی پارٹی کو بھی نوٹس جاری کئے گئے ہیں۔ آرٹیکل 63 (A) کے تحت الیکشن کمیشن ڈکلیریشن موصول ہونے کے 30 دن کے اندر ان پر فیصلہ کرنے کا مجاز ہے۔

الیکشن کمیشن اعلامیہ میں بتایا گیا ہے کہ فارن فنڈنگ کیس کی سماعت میں تاخیر کے بیانات کی تردید کرتے ہیں۔الیکشن کمیشن میں پی ٹی آئی، پیپلز پارٹی اور ن لیگ فارن فنڈنگ سے متعلق اسکروٹنی کمیٹی کام کر رہی ہے۔ اسکروٹنی کمیٹی نے پی ٹی آئی سے متعلق فنڈنگ کیس کی رپورٹ دسمبر 2021 کو الیکشن کمیشن کو جمع کروائی ۔اسکروٹنی کمیٹی کی رپورٹ کو الیکشن کمیشن کے سامنے باقاعدہ سماعت کے لئے مقرر کیا گیا۔

ای سی پی کے مطابق پی ٹی آئی فارن فنڈنگ کیس اب اختتامی مراحل میں ہے۔پی ٹی آئی فارن فنڈنگ کیس میں جواب دہندہ کے حتمی دلائل جاری ہیں۔کمیشن نے پی ٹی آئی فارن فنڈنگ کیس اپریل 27، 28 اور 29 پی ٹی آئی کے وکیل کے حتمی دلائل کے لئے سماعت مقررکی ہے۔ پیپلز پارٹی اور ن لیگ کے کیسز پر کاروائی کے لئے اسکروٹنی کمیٹی نے 9 مئی کی تاریخ مقرر کی ہے۔اسکروٹنی کمیٹی نے دونوں جماعتوں سے ضروری ریکارڈ طلب کیا ہے۔

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More