مذاکرات کی خواہش کو کمزوری کی علامت نہیں سمجھنا چاہیے، عمران خان

اسلام آباد:وزیر اعظم عمران خان نے کہا ہے کہ مذاکرات کی خواہش کو کمزوری کی علامت نہیں سمجھنا چاہیے ۔

آپریشن سوئفٹ ریٹارٹ کے تین سال مکمل ہونے پر وزیر اعظم عمران خان نے سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر اپنے ایک پیغام میں کہا کہ تنازعات کے حل کیلئے ہمیشہ ڈائیلاگ اور سفارت کاری پر یقین رکھتا ہوں۔مذاکرات کی خواہش کو کمزوری کی علامت نہیں سمجھنا چاہیے۔

وزیراعظم عمران خان کا کہنا تھا کہ ملک اور قوم کی سلامتی کے لئے پرعزم اور غیر متزلزل ہیں۔بھارت کو بتادیا جب 27 فروری2019 کو اس نے حملے کے انتخاب کیا۔ہماری افواج قوم کی بھرپور حمایت کے ساتھ جواب دیں گی اور غالب آئیں گی۔

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More