غیرملکی کرنسی اور روشن ڈیجیٹل اکاؤنٹس کے حوالے سے منفی خبروں کی تردید

کراچی: اسٹیٹ بینک اوروزارت خزانہ نے نے غیرملکی کرنسی اکاؤنٹس، روشن ڈیجیٹل اکاؤنٹس اور سیفٹی ڈپازٹ لاکرز کے حوالے سے منفی خبروں کی تردید کردی۔

اسٹیٹ بینک اوروزارت خزانہ نے مشترکہ علامیہ جاری کردیا۔اسٹیٹ بینک نے غیرملکی کرنسی اکاؤنٹس، روشن ڈیجیٹل اکاؤنٹس اور سیفٹی ڈپازٹ لاکرز کے حوالے سے منفی خبروں کی تردید کردی۔ اسٹیٹ بینک کے مطابق بینکوں میں غیرملکی کرنسی و روشن ڈیجیٹل اکاؤنٹس ، سیفٹی ڈپازٹ لاکرز برقرار ہیں ۔

مرکزی بینک کے مطابق تمام اکاؤنٹس اور لاکرز مکمل طور پر محفوظ ہیں ۔ان اکاؤنٹس پرکسی قسم کی پابندی عائد کرنے کی کوئی تجویز زیر غور نہیں ہے ۔ غیر ملکی کرنسی اکاؤنٹس کے حوالے سوشل میڈیا پرگردش کرنے والی خبریں بے بنیاد ہیں۔

اعلامیہ میں کہا گیا ہے کہ غیر ملکی کرنسی اکاؤنٹس ، روشن ڈیجیٹل اکاؤنٹس اور سیفٹی ڈپازٹ لاکرز میں کسی قسم کی تبدیلی زیر غور نہیں ہے ۔ فارن کرنسی اکاؤنٹس آرڈیننس 2001 کے تحت روشن ڈیجیٹل اکاؤنٹس سمیت غیر ملکی کرنسی اکاؤنٹس قانونی طور پر محفوظ ہیں ۔

وفاقی وزارت خزانہ کے مطابق حکومت ملک میں موجودتمام مالیاتی اثاثوں کی حفاظت کے لئے پُرعزم ہیں ۔حکومت ملک میں میکرواکنامک استحکام کویقینی بنانے کے لیے تمام ضروری اقدامات کررہی ہے ۔

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More