داعش پاکستان کا امیر افغانستان میں مارا گیا

کراچی : داعش پاکستان کا امیر افغانستان میں مارا گیا۔ امیر پاکستان کو صوبے خوست میں نامعلوم افراد نے فائرنگ کا نشانہ بنایا۔

ذرائع کے مطابق فائرنگ کا واقعہ گلاں کیمپ کے قریب پیش آیا ۔ حملے میں داعش کا امیر پاکستان داؤد محسود عرف لنگڑا مارا گیا، داؤد محسود کا نام سی ٹی ڈی سندھ کی انتہائی مطلوب ملزمان کی فہرست میں بھی شامل تھا ۔

داؤد محسود کراچی پولیس میں سپاہی تھا جو 2004 میں پولیس میں بھرتی ہوا، داؤد محسود نے پولیس میں نو سال ملازمت کی۔ تاہم داؤد محسود کو 2013 میں پولیس کی ملازمت سے برطرف کردیا گیا تھا ۔

داؤد محسود داعش سے قبل کالعدم تحریک طالبان کا حصہ تھا ۔ داؤد محسود کو حکیم اللہ محسود کا قریبی ساتھی بھی بتایا جاتا ہے۔ داؤد محسود رابطے پر کالعدم تحریک طالبان چھوڑ کر داعش میں شامل ہوگیا تھا ، ریڈ بک کے مطابق داؤد محسود پاکستان میں داعش کا سربراہ تھا۔

ذرائع کے مطابق داؤد محسود پاکستان میں شہریوں اور سیکیورٹی فورسز پر حملوں میں ملوث تھا ۔

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More