فراڈ کیس،جرم ثابت ہونے پر ملزم کو دس سال قید کی سزا

کوئٹہ:جعلی انویسٹمنٹ کمپنی فراڈ کیس میں احتساب عدالت کوئٹہ نے جرم ثابت ہونے پر معظم جان کو دس سال قید اور پانچ کروڑ روپے جرمانے کی سزا سنادی۔ این اے او کے سیکشن اے 31 میں تین سال کی مزید سزا بھی سنائی گئی ہے۔ معظم جان نے سینکڑوں لوگوں کو منافع کا جھانسہ دیکر کروڑوں روپے سے محروم کیا۔

کیس کا فیصلہ احتساب عدالت نمبر تین کے جج آفتاب لون نے سنایا، نیب کی جانب سے پراسیکیوٹر محمد داؤد جان نے کیس کی پیروی کی۔ نیب بلوچستان کی تحقیقات کے مطابق معظم جان نے جعلی انوسٹمنٹ کمپنی کے زریعے اسٹاک ایکسچینج میں منافع کا جھانسہ دیکر سینکڑوں افراد سے کروڑوں روپے وصول کئے اور کچھ عرصہ منافع کی معمولی رقم دیکر روپوش ہو گیا۔

نیب بلوچستان نے ملزم کے خلاف شکایات پر فوری کارروائی کرتے ہوئے تحقیقات مکمل کرکے کیس احتساب عدالت میں دائرکردیا۔ معظم جان فرار ہوچکا تھا کچھ عرصہ قبل نیب کی انٹیلی جینس ٹیم نے کراچی سے گرفتار کیا۔ احتساب عدالت کوئٹہ نے معظم جان کے خلاف ناقابل تردید ثبوتوں کی روشنی میں سزا اور جرمانے کے احکامات جاری کردیئے۔

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More