مہنگائی کی شرح میں اعشاریہ 19 فیصد کی کمی

ادارہ شماریات نے ہفتہ وارمہنگائی کے اعداد و شمار جاری کردیئے۔ ملک میں مہنگائی کی شرح میں 0.19 فیصد کی انتہائی معمولی کمی ہوئی۔

ادارہ شماریات کے مطابق مہنگائی کی مجموعی شرح 40 فیصد سے نیچے نہیں آسکی ہے۔ ایک ہفتےمیں 10اشیا کی قیمتوں میں کمی جبکہ 11 کی قیمتوں میں استحکام رہا۔ رپورٹ میں بتایا گیا کہ 1 ہفتےمیں 30 اشیا کی قیمتوں میں اضافہ ریکارڈ کیا گیا جن میں چائے کی پتی، دال مونگ، دال ماش، انڈے، آٹا چاول شامل ہیں۔ اس کے علاوہ 190 گرام برانڈ چائے کی پتی کا پیکٹ 18روپے سے زائد مہنگا ہوا ہے۔ دال مونگ کی فی کلو قیمت میں 8 روپے 31 پیسے کا اضافہ ہوا۔ 1 ہفتےمیں فی درجن انڈوں کی قیمت 235 سے242 روپے تک پہنچ گئی جب کہ 20 کلو آٹے کا تھیلا 1 ہفتے میں 25 روپے 41 پیسے مہنگا ہوا ہے۔
ٹوٹا باسمتی چاول کی فی کلوقیمت میں 1 روپے61 پیسے اور دال ماش کی فی کلو قیمت میں 6 روپے34 پیسے اضافہ ہوا ہے۔

ادارہ شماریات کےمطابق گائے کا گوشت 1 ہفتے میں 2 روپے تک مہنگا ہوا ہوا۔ بکرے کے گوشت کی فی کلو قیمت میں 3 روپے 98 پیسے کا اضافہ ہوا۔ ایک ہفتےمیں پیاز اور ٹماٹر کی فی کلو قیمت میں 16 روپےتک کمی ہوئی ہے۔ ایل پی جی کا گھریلو سلنڈر 80 روپے تک سستا ہوا ہے۔

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More