ہر جج قانون کے مطابق اپنا فیصلہ دیتا ہے، چیف جسٹس

لاہور: چیف جسٹس پاکستان گلزار احمد کا کہنا ہے کہ ہر جج قانون کے مطابق اپنا فیصلہ دیتا ہے۔ عدالتیں آزاد ہیں اور آزاد رہیں گی ۔

پنجاب بار کونسل لاہور میں منعقدہ سیمینار سے خطاب میں چیف جسٹس آف پاکستان جسٹس گلزار احمد نے کہا کہ وکلا کا کام ججوں کی معاونت کرنا ہے ۔فیصلے پر تبصرہ ہوسکتا ہے لیکن اس پر جھگڑا نہیں کرسکتے ۔ عدلیہ کا کوئی رجحان نہیں ہوتا، ایسا نہیں کی سردی آئی تو ججز سردی والے فیصلے دے دیں۔

چیف جسٹس پاکستان کا کہنا تھا کہ بار اور بنچ کا چولی دامن کا ساتھ ہے وہ ایک دوسرے کے مخالف نہیں ہوسکتے۔

چیف جسٹس لاہور ہائیکورٹ محمد امیر بھٹی نے منڈی بہاؤالدین میں جج پر حملے پر اظہار تشویش کرتے ہوئے کہا کہ کون اپنے گھر پر حملہ کرتا ہے؟وکلا کو عدلیہ پر حملوں کا لائسنس نہیں دے سکتے۔

ان کا کہنا تھا کہ وکلا پر انسداد دہشتگردی کی دفعات کے تحت مقدمات کا اعتراض کیا گیا۔ عدلیہ کے ساتھ یہ سلوک کریں گے تو پھر کیا توقع رکھیں گے؟

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More