توہین رسالت و مذہب کے قانون کا غلط استعمال نہیں ہورہا ہے، طاہر اشرفی

اسلام آباد: وزیراعظم کےنمائندہ خصوصی حافظ طاہر محمود اشرفی کا کہنا تھا کہ پاکستان میں اقلیتوں کے حقوق پر کوئی شب خون نہیں مارسکتا ہے۔ ملک میں توہین رسالت و مذہب کے قانون کا غلط استعمال نہیں ہورہا ہے۔

اسلام آباد میں آل پارٹیز منارٹیز الائنس کے زیر اہتمام سابق وفاقی وزیر شہباز بھٹی کی یاد میں منعقدہ بین المذاہب کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے وزیراعظم کےنمائندہ خصوصی حافظ طاہر محمود اشرفی نے کہا کہ تمام مذاہب انسانیت کے قتل اور فساد کی مذمت کرتے ہیں۔

ان کا کہنا تھا کہ اسلام میں جبری مذہب کی تبدیلی اور جبری شادی کا کوئی تصور نہیں ہے ۔ جاہلانہ رسم و رواج کو دین سے نہ جوڑا جائے۔ جبری شادی کا اسلام میں کوئی تصور نہیں ہے۔ جبری شادی اور جبری مذہب کی تبدیلی کی بھی شکایت نہ ہونے کے برابر ہیں۔

کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے دیگر رہنماؤں نے کہا کہ پاکستان میں کوئی دو نمبر شہری نہیں ہے ۔ آئین پاکستان سب پاکستانیوں کو برابر کا حق دیتا ہے ۔ پاکستان کے امن و سلامتی اور استحکام کیلئے سب کو مل کر جدوجہد کرنی ہو گی ۔ مسلمان اور اقلیتوں کی بیٹیوں کے حقوق ایک ہی جیسے ہیں۔

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More