تربت سے بی ایل اے کی دہشتگرد خاتون کو گرفتار کرلیا، فرح عظیم شاہ

اسلام آباد : بلوچستان حکومت کی ترجمان فرح عظیم شاہ کا کہنا ہے کہ سی ٹی ڈی اور حساس ادارے نے مکران رینج میں دہشت گرد نور جہاں اور بی ایل اے مجید بریگیڈ کے رکن کو گرفتار کرکے اسلحہ و بارودی مواد برآمد کرلیا۔

اسلام آباد میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے بلوچستان حکومت کی ترجمان فرح عظیم شاہ نے کہا کہ تربت سے دہشت گرد نور جہاں اور بی ایل اے مجید بریگیڈ کے رکن کو گرفتار کیا گیا ہے۔خاتون دہشت گرد سے 9 کلو بارودی مواد، خودکش جیکٹ، کلاشنکوف اور ہینڈ گرینیڈ برآمد ہوا ہے۔

ترجمان نے بتایا کہ تفتیش میں خاتون دہشت گرد نور جہاں بہت سے انکشافات کیے جبکہ مزید تین خواتین وحیدہ، فہمیدہ اور حمیدہ کے نام بتائے ہیں۔گرفتار نور جہاں نے بیرون ملک سے پیسوں کے عوض دہشتگردی کا اعتراف کیا ۔

فرح عظیم شاہ نے کہا کہ مجید بریگیڈ خواتین کو خودکش حملوں کے لیے تیار کررہا ہے۔ دہشت گردی میں بیرونی ہاتھ ملوث ہے ۔کوئی برطانیہ اور کوئی خلیجی ممالک میں بیٹھ کر دہشت گردی کروا رہا ہے۔ بھارت اور را پاکستان میں عدم استحکام پیدا کرنا چاہتے ہیں۔

ترجمان بلوچستان حکومت نے کہا کہ خواتین کو دہشتگردی کیلئے استعمال کرنے والے بلوچ نہیں ہو سکتا۔ وزیراعلیٰ بلوچستان نے تمام شرپسندوں کو قومی دھارے میں شمولیت کی دعوت دی ہے۔بلوچستان کی حفاظت کی بات آئے گی تو کوئی سمجھوتہ نہیں کیا جائے گا۔

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More