عدم اعتماد سے ایک رات پہلے مجھے دھمکی دی گئی، بلاول بھٹو

اسلام آباد: وزیر خارجہ بلاول بھٹو نے کہا ہے تحریک عدم اعتماد سے ایک رات پہلے مجھے دھمکی دی گئی، کہا گیا فوری الیکشن پر مان جائیں یا مارشل لاء کے لیے تیار ہوجائیں۔ قومی اسمبلی میں خطاب کرتے ہوئے بلاول نے کہا دھمکی ایک وزیر کے ذریعے دی گئی تھی۔ بلاول کا کہنا تھا پہلے اصلاحات پھر انتخابات ہوں گے، ہم صاف شفاف الیکشن چاہتے ہیں۔

قومی اسمبلی میں اظہار خیال کرتے ہوئے وزیر خارجہ بلاول بھٹو زرداری نے کہا کہ اگر جمہوریت کی ترقی چاہتے ہیں تو ہمیں ان واقعات کی تحقیقات کرکے متعلقہ افراد کے خلاف کارروائی کرنی چاہیے۔انہوں نے کہا کہ عدم اعتماد سے ایک روز پہلے فوری انتخابات یا پھر مارشل لاء کی دھمکی دی گئی۔انہوں نے کہا کہ قومی اسمبلی سمیت اداروں کو متنازع بنایا گیا، غیر آئینی، غیر جمہوری کاموں میں ملوث افراد کی نشاندہی کیلئے کمیشن بنایا جائے ۔

وزیر خارجہ کا کہنا تھا کہ حالات ہمارے اندازے سے بھی زیادہ خراب تھے،سابق وزیراعظم نے بھاگتے بھاگتے آئین توڑا۔بلاول بھٹو نے کہا کہ ایک جمہوری طریقے سے ناکامی اور نااہلی کی وجہ سے سابق حکمران کو اٹھایا گیا، ایک جمہوری انداز میں اپوزیشن سے اٹھ کے حکومتی بینچز پر بیٹھے ہیں۔انہوں نے کہا کہ مسلم لیگ ن اور پیپلز پارٹی کی سیاسی تاریخ سب کے سامنے ہے، ایم کیو ایم اور پیپلز پارٹی کے اختلافات بھی سیاسی تاریخ کا حصہ ہیں، قوم پرست جماعتیں بھی اپنا موقف رکھتی ہیں۔

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More