نئے مالی سال کے لیے بلوچستان کا 612 ارب روپے کا بجٹ پیش

کوئٹہ: بلوچستان کا آئندہ مالی سال کے لیے 6 سو 12 ارب 70 کروڑ روپے کا ٹیکس فری بجٹ بلوچستان اسمبلی میں پیش کردیا گیا۔

صوبائی وزیرخزانہ سردار عبدالرحمان کھیتران نےمالی سال 2022_23 کا بجٹ پیش کردیا۔ بجٹ کا کل حجم 612 ارب 70 کروڑ روپے ہے، بجٹ میں 72 ارب روپے کا خسارہ ظاہر کیا گیا ہے۔

آئندہ مالی سال کے بجٹ میں غیر ترقیاتی اخراجات کا تخمینہ 246 ارب روپے ہے، جس کیلئے بلوچستان حکومت 191 ارب روپے فراہم کریگی۔ فارن فنڈڈ پروجیکٹس کی مد میں 14 ارب روپے رکھے گئے، جبکہ ترقیاتی بجٹ میں وفاقی حکومت کے 38 ارب روپے کے منصوبے بھی شامل کیے گئے ہیں۔

صوبائی وزیر خزانہ سردار عبدالرحمان کھیتران کا کہنا تھا کہ آئند مالی سال کے بجٹ میں تعلیم کے لیے 83 ارب 21 کروڑ روپے رکھے گئے ہیں، صحت کے شعبے کیلئے 43ارب روپے سے زائد مختص کیے گئےہیں، جبکہ بجٹ میں کوئی نیا ٹیکس نہیں لگایا گیاہے۔

سرکاری ملازمین کی تنخواہوں میں 15 فیصد اضافہ کیا گیاہے جبکہ بجٹ میں مجوعی طور پر 8 ہزار نئی آسامیاں بھی رکھی گئی ہیں۔

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More