اسکروٹنی کمیٹی کی رپورٹ پر عمران خان مستعفی ہوکر گھر چلے جائیں، عطا اللہ تارڑ

لاہور: مسلم لیگ ن کے ایڈیشنل سیکرٹری جنرل عطااللہ تارڑ نے الزام عائد کیا ہے کہ عمران خان کے چار ذاتی ملازمین کے اکاؤنٹس سامنے آئے ہیں جس کی تفصیلات سامنے لائی جائیں۔

پنجاب اسمبلی میں اپوزیشن لیڈر حمزہ شہباز کی زیرصدارت اہم مشاورتی اجلاس ہوا جس میں بلدیاتی نظام کے حوالے سے تجاویز پر غور کیاگیا۔ اجلاس کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے عطااللہ تارڑ نے الزام عائد کیا کہ فارن فنڈنگ کیس میں اسکروٹنی کمیٹی نے جو رپورٹ دی اس پر عمران خان مستعفی ہوکر گھر چلے جائیں، الیکشن کمیشن سے مطالبہ ہے کہ تحقیقات کرکے ذمہ داروں کا تعین کرے کہ کتنا پیسہ کتنے اکاؤ نٹس میں آیا۔

عطااللہ تارڑ نے کہا کہ ٹیکس کی تفصیلات ثابت کرتی ہیں کہ عمران خان کرپٹ ترین آدمی ہیں ۔ ایک کروڑ روپے ٹیکس کیسے دیا ؟انکی آمدن تو بڑھی ہے۔

ن لیگی رہنما کا کہنا تھا کہ آڈیو لیکس کا پتہ لگانا چاہیے کہ کب کی اور کس دور کی ہے ۔انہوں نے مزید کہا کہ شہزاد اکبر بے روزگار ہونے جارہے ہیں کیونکہ شہبازشریف باہر نہیں جا رہے۔

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More