سربراہ اے این پی اسفندیار ولی کی پشاور دھماکے کی مذمت

پشاور:عوامی نیشنل پارٹی کےصدر اسفندیار ولی خان کا کہنا ہے کہ حکومت اور ریاست شہریوں کو تحفظ دینے میں ناکام ہے ۔ خیبر پختونخوا سمیت پورے ملک میں بدامنی کی نئی لہر تشویشناک ہے۔پشاور دھماکے میں قیمتی جانوں کا ضائع ہونا افسوسناک اور قابل مذمت ہے۔

اے این پی سربراہ اسفندیار ولی خان نے پشاور میں نماز جمعہ کے دوران بم دھماکے کی مذمت کرتے ہوئے کہا کہ دہشتگردی اور دہشتگردوں کا کوئی مذہب نہیں ہوتا لیکن دوران عبادت معصوم شہریوں کو نشانہ بنانا انسانیت سوز عمل ہے اس کی کی جتنی بھی مذمت کی جائے کم ہے۔

انہوں نےکہا کہ دہشتگردی کی نئی لہر نے ملک اور باالخصوص خیبر پختونخوا اور بلوچستان کے عوام کو عدم تحفظ کا شکار کردیا ہے۔ دو روز قبل کوئٹہ اور آج پشاور میں دھماکا تشویشناک صورتحال کی جانب اشارہ کررہی ہے۔ خیبر پختونخوا کے عوام بےشمار قربانیاں دے چکے ہیں۔اب اس سلسلے کو روکنا ہوگا اور قیام امن کو یقینی بنانا ہوگا۔

صدر عوامی نیشنل پارٹی نے کہا کہ اے این پی دہشتگردی بارے ایک واضح موقف رکھتی ہے۔ اے این پی عرصہ دراز سے ملک میں دہشتگرد گروہوں کے منظم ہونے بارے خبردار کررہی ہے لیکن روک تھام کیلئے کوئی سنجیدہ اقدامات نہیں اٹھائے جارہے ہیں۔ پختون بیلٹ میں کچھ عرصہ سے حالات کو خراب کرنے کی سازش کی جارہی ہے۔ حکومت اور انتظامیہ کے غیرسنجیدہ رویے کی وجہ سے قیمتی جانیں ضائع ہورہی ہیں
۔

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More