تازہ ترین
موجودہ حکومت میں اتنی طاقت ہی نہیں کہ دہشتگرد کو دہشتگرد کہہ سکے، اسفند یار ولی

موجودہ حکومت میں اتنی طاقت ہی نہیں کہ دہشتگرد کو دہشتگرد کہہ سکے، اسفند یار ولی

پشاور: (29 جون 2020) عوامی نیشنل پارٹی کے سربراہ اسفند یار ولی خان نے کہا ہے کہ  جس ملک کا وزیراعظم جب اسمبلی پر ایک عالمی دہشتگرد کو شہید قرار دے، وہ حکومت دہشتگردی ختم نہیں کرسکتی۔ ایسے بیانات دراصل ان شہداء اور غازیوں کے خون کی توہین ہے جنہوں نے قوم و ملک کی خاطر قربانیاں دیں۔ موجودہ حکومت میں اتنی طاقت ہی نہیں کہ دہشتگرد کو دہشتگرد کہہ سکے۔

پاکستان اسٹاک ایکسچینج پر دہشتگرد حملے کی مذمت کرتے ہوئے عوامی نیشنل پارٹی کے سربراہ اسفندیار ولی خان نے کہا کہ دہشتگردی کی کوشش ناکام بنانے والے اہلکاروں کو خراج تحسین پیش کرتے ہیں۔ پوری قوم دہشتگرد حملے میں شہید پولیس اہلکار اور دیگر اہلکاروں کے اہلخانہ کے غم میں شریک ہیں۔

انہوں نے کہا کہ روز اول سے اس ناسور دہشتگردوں کے سامنے کھڑے رہے ہیں اور آج بھی اسی موقف کے ساتھ کھڑے ہیں۔ نیشنل ایکشن پلان پر من و عن عملدرآمد نہ کرنے سے دہشتگرد مزید متحرک ہورہے ہیں۔ حکومت نے نیشنل ایکشن پلان کاغذ کے ایک ٹکڑے تک محدود کردیا ہے۔

سربراہ اے این پی نے کہا کہ واقعے میں شہید پولیس اور سیکیورٹی اہلکاروں کیلئے شہداء پیکج کا اعلان کیا جائے۔

اسفند یار ولی خان نے مزید کہا کہ جو لوگ دہشتگردوں کو اپنا ہیرو سمجھتے ہیں وہ دہشتگردی کے خلاف نہ جنگ لڑسکتے ہیں اور نہ جیت سکتے ہیں۔ دہشتگرد خیبرپختونخواہ سمیت ملک کے دیگر صوبوں میں دوبارہ متحرک اور منظم ہورہے ہیں اور حکومتی ایوانوں میں اقتدار پر رہنے اور کرسی بچانے کی جنگ لڑ رہے ہیں۔ حکومت میں ملک کی سالمیت اور بقاء کے بارے میں کوئی سوچ و فکر موجود ہی نہیں۔

Comments are closed.

Scroll To Top