معیشت کی بحالی کیلئے اسلام آباد چیمبر آف کامرس کا آل پارٹیز کانفرنس کا انعقاد

پاکستان کے تاجروں نے کہا ہے کہ ہمارا ملک تجربہ گاہ بن چکا ہے اب یہ تجربات بند ہونے چاہیئں جب تک ملک میں سیاسی استحکام نہیں آتا معاشی صورتحال کسی صورت بہتر نہیں ہو سکتی۔ وزیرخزانہ مفتاح اسماعیل نے سوال اٹھایا کہ ملک کا وزیرخزانہ دوسرے ممالک یا اداروں سے پیسے مانگے تو کیا یہ ملک خوددار ہوگا۔ کانفرنس میں پی ٹی آئی کے کسی نمائندے نے شرکت نہیں کی۔

پاکستان کی معشیت کی بحالی کیلئے ملک بھر کی تاجربرادری میدان میں نکل پڑی اسلام آباد چیمبر آف کامرس نے آل پارٹیز کانفرنس کا انعقاد کیا۔کانفرنس میں پی ٹی آئی کے علاوہ ملک بھر کی تمام سیاسی جماعتوں کےنمائندے شریک ہوئے۔

کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے وزیرخزانہ مفتاح اسماعیل کا کہنا تھا سیاست دان, بزنس کمیونٹی سب کو اس ملک کی ترقی کیلئے اپنا کردار ادا کرنا ہوگا ملک کا وزیر خزانہ دوسرے ممالک اداروں میں پیسے مانگے کیا یہ ملک خوددار ہوگا۔

وفاقی وزیراحسن اقبال نے معیشت کی بحالی کیلئے کانفرنس کو خوش آئندقرار دیتے ہوئے کہا کہ جس ملک کی معشیت کمزور ہوگی اس کی قیادت آئی ایم ایف سے مذاکرات میں ہی گزار دیتی ہے ہمیں اب زبانی باتوں کے بجائے مکمل عملی اقدامات کرنے ہوں گے۔

مشیر وزیراعظم قمر زمان کائرہ کا کہنا تھا کہ ماضی سے نکل کر مستقل کی طرف بڑھنا ہوگا تب ہی مسائل حل ہوں گے۔

کانفرنس کے اغراض ومقاصد بیان کرتے ہوئے صدر چیمبراسلام آباد چیمیرب آف کامرس شکیل منیر نے کہا کہ ملکی معشیت بڑے چیلنجز سے گزر رہی ہے چیمبر آف کامرس تمام اداروں سے ملکر کرمعشیت کی بہتری کیلئے تجویز لے گی ان تجویز کی روشنی میں ملکی معشیت کیلئے تمام سیاسی جماعتوں کو مل کر کردار ادا کرنا ہوگا۔

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More