امریکی کمپنی نے فنگر پرنٹ سے چلنے والی پستول تیارکرلی

واشنگٹن: مشہور و معروف اداکار جیمز بونڈ کی فلم اسکائی فال میں دکھایا گیا تھا کہ جاسوس کے پاس ایسی گن تھی جو ہتھیلی کے پرنٹ پر کام کرتی تھی یعنی صرف مالک کے ہاتھ ہی اسے چلایا جاسکتا تھا تاہم اب امریکا میں ایک کمپنی نے ایسی گن متعارف کرائی ہے جو مالک کے انگلیوں کے نشانات پر ہی کام کرسکے گی۔

امریکی کمپنی نے متعدد ناکام کوششوں کے بعد 9 ایم ایم کی اسمارٹ گن تیار کرلی ہے جس کو فنگرپرنٹ ریڈر سے ان لاک کیا جاسکتا ہے اور کمپنی اسے 2022 میں فروخت کے لیے پیش کرنے کی خواہشمند ہے۔

لوڈ اسٹار ورکس نامی کمپنی نے اسے تیار کیا ہے اور اس کے شریک بنای گیراتھ گلاسر کے مطابق انہیں اس گن کا خیال جیمز بونڈ فلم دیکھ کر نہیں آیا بلکہ بچوں کے ہاتھوں غلطی سے والدین کی گن چلنے کے واقعات کو پڑھ کر آیا۔ ان کا کہنا ہے کہ اسمارٹ گن سے کوئی بچہ غلطی سے اسے چلا نہیں سکے گا بلکہ اسے مالک کے علاوہ کوئی بھی استعمال نہیں کرسکے گا۔

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More