تحریک اعتماد کا مقصد آزادانہ اورمنصفانہ انتخابات کی راہ ہموار کرنا ہے، احسن اقبال

شکر گڑھ میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئےاحسن اقبال کا بڑا دعویٰ سامنے آیا ہےان کا کہنا تھا کہ تحریک عدم اعتماد کامیاب ہونے کے بعد الیکشن کروائے جائیں گے۔تحریک عدم اعتماد تمام اپوزیشن جماعتیں مشترکہ طور پر لا رہی ہے۔ تحریک عدم اعتماد کب پیش کرنا ہے اس کا فیصلہ پی ڈی ایم ، پیپلز پارٹی اور اپوزیشن کے سر براہان نے کرنا ہے۔

رہنما نون لیگ احسن اقبال کا کہنا تھا کہ اپوزیشن کے پاس مطلوبہ نمبر موجود ہے۔ تاہم ہماری کوشش ہے کہ حکومت کی اتحادی جماعتوں کو بھی شامل کیا جائے۔ہم اس تحریک کو وسیع البنیاد حمایت کے ساتھ پیش کریں گے۔ تاکہ کامیاب ہو۔تحریک اعتماد کا مقصد ملک کو موجودہ بحرانوں سے نکالنے اور آزادانہ منصفانہ انتخابات کی راہ ہموار کرنے کے لیے ہے۔

ملکی داخلہ پالیسی کے متعلق ان کاکہنا تھا کہ ملک کی داخلی سلامتی دن بدن بگڑ رہی ہے۔ نون لیگ کے دور میں دہشت گردی کاخاتمہ کر دیا گیا تھا ۔اب پھر سر اٹھانے لگی ہے۔اور خارجی محاذ پر حکومت کی کوئی پالیسی نہیں ہے۔

احسن اقبال کا کہنا تھا کہ عمران خان کی حکومت کو ہٹانا پاکستان کی سلامتی اور خود مختاری کے لیے بہت ضروری ہے۔ حکومت واویلا کر رہی ہے کہ بین الاقوامی سازش کے تحت اسے ہٹایا جا رہا ہے۔ جبکہ عوام حکومت سے تنگ آ چکی ہیں۔

احسن اقبال کا مزید کہنا تھاکہ مسلم لیگ نون ق لیگ ، جی ڈی اے اور دیگر جماعتوں کے ساتھ رابطوں پر غور کر رہی ہے ۔ اور اسی طرح پیپلز پارٹی بھی سندھ میں ایم کیو ایم کو حکومتی چنگل سے آزاد کرنے کی کوشش کر رہی ہے۔ مزید کہا کہ معاملہ وزیراعظم یا وزیر اعلیٰ بننے کا نہیں بلکہ ملک کو بچانے کا ہے۔

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More