کراچی سے 10 روز کے دوران تیسری لڑکی لاپتہ ہو گئی

کراچی: سولجر بازار سے 25 سال کی لڑکی دینارتین روز قبل مبینہ طور پر لاپتہ ہوئی، اہلخانہ نے لڑکی کے لاپتا ہونے کی درخواست سولجر بازار تھانے میں دے دی ہے۔

لاپتہ ہونے والی لڑکی کے بھائی کا کہنا ہے کہ میری بہن دینار 22 اپریل کو ٹیوشن پڑھانے گئی لیکن واپس نہیں آئی، بہن کا موبائل فون بھی بند ہے، پولیس مدد فراہم کرے۔

پولیس کا کہنا ہے کہ لڑکی کی تلاش شروع کر دی ہے اور اہلخانہ نے فی الحال مقدمہ درج کرنے سے منع کیا ہے۔ پولیس کے مطابق لڑکی کے موبائل سے متعلق تفصیلات حاصل کی جا رہی ہیں۔

یاد رہے کہ کراچی سے 10 روز قبل دعا زہرہ اور 20 اپریل کو نمرہ کاظمی مبینہ لاپتہ ہوئی تھی۔

نمرہ کاظمی کے بارے میں پولیس کا کہنا ہے کہ نمرہ اس وقت ڈیرہ غازی خان میں ہے اور شبہ ہے۔ نمرہ نے ڈی جی خان کے رہائشی سے نکاح کرلیا ہے۔ نمرہ کاظمی نے شادی کے حوالے سے ویڈیوز بھی جاری کی ہیں۔ مختصر ویڈیو بیان میں نمرہ کاظمی نے کہا کہ میں 17 اپریل کو ڈی جی خان پہنچی اور 18 اپریل کو نکاح کی

جبکہ 14 سالہ دعا زہرہ کے لاہور میں موجود ہونے کا انکشاف ہوا ہے اور پولیس کا کہنا ہے کہ دعا زہرہ کا غیرقانونی طور پر نکاح کرایاگیا۔ پولیس ذرائع کا کہنا ہے کہ لڑکا لاہور کا رہائشی ہے۔ نکاح نامے کی تصدیق کرائی جارہی ہے۔

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More