شوگر ملز اور منی لانڈرنگ کیس، ایف آئی اے کو عبوری رپورٹ جمع کرانے کا حکم

لاہور: احتساب عدالت نےشہباز شریف کیخلاف شوگر ملز اور منی لانڈرنگ کیس میں ایف آئی اے کو 20 نومبر تک عبوری رپورٹ پیش کرنے کا حکم دے دیا۔

احتساب عدالت لاہور میں شوگر ملز اورمنی لانڈرنگ کیس کی سماعت ہوئی۔ شہبازشریف اورحمزہ شہباز بینکنگ کورٹ لاہورمیں پیش ہوئے۔شہباز شریف اور حمزہ شہباز کی ضمانت میں 20 نومبر تک کی توسیع کردی گئی۔ شہباز شریف نے روسٹرم پرآکربیان دیا کہ سال ہو گیا ہے ایک دھیلےکی کرپشن بھی ثابت نہیں ہوئی ۔ نیب نے ہمارے خلاف منی لانڈرنگ جیسا کیس بنایا ہے۔ ایک سال ہوگیا، ایف آئی اے نے 2 بار انویسٹی گیشن جیل میں کی ۔میرے بیٹے سے بھی جیل میں ایف آئی اے نے انویسٹی گیشن کی۔ایف آئی اے ایک ماہ میں اب کیا رپورٹ بنا کرعدالت پیش کرے گا؟۔

بینکنگ کورٹ کے جج نے جواب میں کہا کہ ایف آئی اے نے وقت مانگا ہے ،انکو اگلی سماعت پر دیکھ لیں گے ۔ایف آئی اے عبوری چالان جمع کرانے کی تاریخ بتائےورنہ عدالت حکم جاری کرے گی۔ نومبر کے وسط تک ہر صورت ایف آئی اے عبوری چالان جمع کرائے۔ اپوزیشن لیڈرشہبازشریف نےعدالت کےباہر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا میرے خلاف جو کیس نیب نے بنایا وہی ایف آئی اے نے بھی بنا دیا، میرے خلاف جھوٹ پر مبنی کیسز بنائے گئے ہیں۔حکمران آج تک سیاسی انتقامی کاروائیوں کے علاوہ کچھ نہیں کر سکے۔کالعدم جماعت کے ساتھ مذاکرات ہی مسئلے کا بہترین حل ہے۔

حمزہ شہباز نے میڈیا سے گفتگو میں کہا ہے کہ حالات بگڑتے جا رہے ہیں، معیشت کا برا حال ہے،حکومت کا یوم حساب قریب آ چکا ہے، 50لاکھ نوکریاں، ایک کروڑ گھر دینے کا کا ڈرامہ بے نقاب ہو چکا ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ پیٹرول اور بجلی کی قیمتوں میں پھر اضافہ ہونے جا رہا ہے، افغانستان کی صورتحال پر تمام سنجیدہ سیاسی جماعتوں کو ایک ایجنڈا بنانا چاہیے۔

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More