جنوبی افریقہ کیخلاف ٹیسٹ سیریز کیلئے 20 رکنی قومی ٹیم کا اعلان

لاہور: پاکستان کی جنوبی افریقہ کے خلاف ٹیسٹ سیریز کے لیے 20 رکنی ٹیم کا اعلان کر دیا گیا۔

پاکستان کرکٹ ٹیم کے چیف سلیکٹر محمد وسیم نے 20 رکنی ٹیم کا اعلان کرتے ہوئے کہا کہ بابر اعظم کپتان اور محمد رضوان نائب کپتان ہوں گے۔ فاسٹ باؤلر محمد عباس ٹیم میں جگہ نہ بنا سکے جبکہ حارث سہیل اور شان مسعود کو جنوبی افریقہ کے خلاف سیریز سے ڈراپ کیا گیا ہے۔

انہوں نے کہا کہ امام الحق ابھی ریڈ بال کرکٹ کے لیے تیار نہیں ہیں۔ ریڈ بال اور وائٹ بال دونوں فارمیٹ کو ترجیح دی گئی ہے۔ ریڈ اور وائٹ بال کیٹگری میں مجموعی طور پر 33 کھلاڑی شامل ہیں۔ کپتان سمیت 5 کھلاڑیوں کو ریڈ اور وائٹ بال کنٹریکٹ مل گئے ہیں۔ شاہین شاہ آفریدی ریڈ اینڈ وائٹ دونوں کی اے کیٹیگری میں شامل ہیں اور اکٹھے کنٹریکٹس سے چند کھلاڑیوں کو اہمیت نہیں دی جاتی۔ ریڈ اور وائٹ بال میں فارمیٹ کو ترجیح دی جائے گی۔ محمد وسیم نے کہا کہ 10 کھلاڑیوں کو صرف ریڈ بال کنٹریکٹ دیا گیا ہے اور 11 کھلاڑیوں کو صرف وائٹ بال کنٹریکٹ ملا ہے۔ ڈومیسٹک کرکٹ میں اچھی کارکردگی والے 7 کھلاڑی ایمرجنگ کیٹگری کا حصہ ہیں جبکہ اظہر علی ریڈ بال کنٹریکٹ کی اے اور فواد عالم بی کٹیگری میں شامل ہیں۔

انہوں نے کہا کہ عبداللہ شفیق، نسیم شاہ اور نعمان علی ریڈ بال کی سی کٹیگری کا حصہ ہیں جبکہ ڈی کٹیگری میں عابد علی، سرفراز احمد، سعود شکیل، شان مسعود اور یاسر شاہ شامل ہیں۔ فخر زمان اور شاداب خان وائیٹ بال کنٹریکٹ کی کٹیگری اے میں شامل ہیں اور حارث رؤف بی اور محمد نواز کٹیگری سی کا حصہ ہیں۔

چیف سلیکٹر کے مطابق آصف علی، حیدر علی، خوشدل شاہ، محمد وسیم جونیئر کٹیگری ڈی میں شامل ہیں اور شاہنواز دھانی، زاہد محمود اور عثمان قادر بھی کٹیگری ڈی میں شامل ہیں۔علی عثمان، حسیب اللہ، کامران غلام، محمد حارث ایمرجنگ کنٹریکٹ کا حصہ بن گئے۔ محمد حریرہ، قاسم اکرم اور سلمان علی آغا بھی ایمرجنگ کنٹریکٹ کا حصہ ہوں گے۔ انہوں نے کہا کہ سینٹرل کنٹریکٹس میں 12 ماہ کی کارکردگی کو مدنظر رکھا گیا ہے۔ ہمارا کیلنڈر مصروف جا رہا ہے اور دو الگ کنٹریکٹس ہوں گے۔ ریڈ بال اسکواڈ اور وائٹ الگ الگ ہو گا۔

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More