کراچی میں بجلی بحران، لوڈشیڈنگ کا دورانیہ 12 گھنٹے سے تجاوز کر گیا

کراچی: شہر میں توانائی بحران سنگین ہو گیا۔ لوڈشیڈنگ کا دورانیہ 12 گھنٹے سے تجاوز کر گیا۔ لوڈ شیڈنگ سے مستثنیٰ علاقوں میں بھی بجلی بند کی جا رہی ہے۔

کراچی میں بجلی بحران شدت اختیار کر گیا۔ بجلی کی طلب 3400 میگاواٹ سے تجاوز کر گئی۔ کے الیکٹرک نے بجلی کی فراہمی 2700 میگاواٹ تک محدود کردی۔ لائن لاسز والے فیڈرز پر لوڈشیڈنگ کا دورانیہ 12 گھنٹے تک جا پہنچا ہے۔نیوکراچی ، سرجانی ٹاؤن ، بفرزون ، نارتھ کراچی میں بجلی معطل ہے۔

لیاقت آباد ، ایف بی ایریا ، بلدیہ ، اولڈ صدر گارڈن میں بھی شدید لوڈ شیڈنگ جاری ہے،لیاری کے علاقوں میں بھی بجلی کی آنکھ مچولی جاری ہے۔ کراچی میں بدترین لوڈشیڈنگ پر ترجمان کے الیکٹرک نے وضاحتی بیان جاری کرتے ہوئے اپنے صارفین سے معذرت کی ہے ۔ ترجمان کے الیکٹرک کاکہناہے کہ کراچی کو ستائس سو میگا واٹ بجلی فراہم کی جارہی ہے جس میں نیشنل گرڈ سے حاصل کی جانے والی 1000 میگاواٹ بھی شامل ہے۔

ان کا کہنا ہے کہ کراچی میں بجلی کی طلب و رسد میں فرق 500 میگاواٹ تک پہنچ گیا ہے ۔شارٹ فال کے باعث رات کے اوقات میں بھی لوڈشیڈنگ کرنی پڑرہی ہے۔ انہوں نے کہا ہے کہ ایندھن کی قلت کے باعث بجلی کی پیداوار متاثر ہورہی۔ حکومت کی جانب سے بقایاجات کی عدم ادائیگی کے باعث فیول کی خریداری میں مسائل کا سامنا ہے ۔مطلوبہ مقدار میں ایندھن کی فراہمی کے لیے وفاق و صوبائی حکومت سے رابطہ کیا ہے۔

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More