راولپنڈی میں سیکورٹی مزید سخت، داخلی اور خارجی راستے بند

اسلام آباد: راولپنڈی میں سیکورٹی مزید سخت کردی گئی، داخلی اور خارجہ راستے بند ہیں۔ مری روڈ پر ٹریفک معطل ہے۔

سکستھ روڈ، چاندنی چوک، لیاقت باغ، مری چوک اور کمیٹی چوک پر مزید کنٹینرز کھڑے کردیے گئے ہیں۔ راولپنڈی کے تمام داخلی اور خارجی راستے بدستور کنٹینرز اور رکاوٹوں سے بند ہیں۔ انتظامیہ کا کہنا ہے کہ صورتحال معمول پر آنے تک مری روڈ اور ملحقہ علاقوں میں نجی تعلیمی ادارے اور کاروباری مراکز بند رہیں گے۔

راولپنڈی میٹرو بس سروس بھی تاحکم ثانی بند ہے۔ راولپنڈی سمیت پنجاب بھر میں 2ماہ تک رینجرز کی تعیناتی کے احکامات پر عمل شروع کر دیا گیا۔راولپنڈی میں وارث خان ،لیاقت باغ اورشمس آباد پر رینجرز دستے تعینات کر دیے گئے۔فیض آباد پر ایف سی رینجرز ایلیٹ فورس اور پولیس کی بھاری نفری موجود ہے۔ ترجمان اسلام آباد ٹریفک پولیس کا کہنا ہے کہ اسلام آباد میں بیشترشاہراہیں ٹریفک کےلیے کھلی ہیں۔

اسلام آباد ایکسپریس وے، لہتراڑ روڈ، پشاورروڈ، سرینگرہائی وے، جناح ایونیو ٹریفک کےلیے کھلا ہے۔ ٹریفک پولیس کے مطابق مارگلہ روڈ،شاہراہ دستور،اتاترک ایونیو،فیصل ایونیو اورنائنتھ ایونیو بھی ٹریفک کےلیے کھلا رکھا گیا ہے۔

آئی جے پی روڈ ا سٹیڈیم روڈ کی جانب سے بند ہے۔ مری روڈ فیض الاسلام اسٹاپ پر دونوں اطراف سے بھی بند ہے۔ واضح رہے کہ کالعدم تنظیم ٹی ایل پی کے لانگ مارچ کے باعث راولپنڈی اور اسلام آباد میں سیکیورٹی سخت کی گئی ہے۔

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More