پولیس اہلکار کو لگی گولی عمران خان کے دہشتگرد ہونے کا ثبوت ہے

اسلام آباد: وزیر داخلہ رانا ثناءاللہ خاں کا کہنا ہے کہ بے گناہ پولیس اہلکار کمال احمد کے سینے میں لگی گولی ثبوت ہے کہ عمران خان دہشت گرد ہے۔

ایک بیان میں رانا ثنا اللہ نے کہا کہ کمال احمد کا قاتل عمران خان، شیخ رشید اور اس کے حواری ہیں، ’خونی مارچ ہوگا‘ کے اعلانانات کرنے والوں سے حساب لیں گے، پولیس پر فائرنگ سے یہ بات ثابت ہوگئی ہے کہ یہ سیاسی سرگرمی نہیں، فائرنگ ثبوت ہے کہ یہ پرامن مارچ چاہتے ہی نہیں تھے۔ وزیر داخلہ نے بیان دیا کہ گالیاں برسانے والوں نے گولیاں برسانا شروع کردی ہیں، قانون کو ہاتھ میں لیا گیا ہے، قانون جواب لے گا، عمران خان مارچ کی آڑ میں ملک میں خانہ جنگی کی سازش کررہے ہیں، کمال احمد کے قاتلوں کو قانون کے کٹہرے میں کھڑا کریں گے، ملک میں خانہ جنگی، افراتفری ، فساد اور انتشار کو قانون کے راستے سے روکیں گے۔

انہوں نے مزید کہا کہ شہید پولیس اہلکار کے اہل خانہ کو شہداء پیکج دیں گے، شہید اہلکار کے اہل خانہ کی کفالت اور بچوں کی تعلیم کی ذمہ داری حکومت لے گی،عوام کے جان ومال کی حفاظت کا فرض پورا کریں گے، شہید کے اہل خانہ سے دلی تعزیت اور ہمدردی کا اظہار کرتے ہیں، اللہ تعالی شہید کے درجات بلند فرمائے، اہل خانہ کو صبر جمیل دے۔ آمین

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More