سپریم کورٹ بار کو کسی سیاسی جماعت کا اتحادی نہیں بننا چاہیے

اسلام آباد: وزیر اطلاعات فواد چوہدری نے الیکشن کمیشن سے پی ٹی آئی اور مسلم لیگ ن کے غیر ملکی فنڈنگ کیس کا ایک ساتھ فیصلے کا مطالبہ کردیا۔

سپریم کورٹ کے باہر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے فواد چوہدری نے کہا ہے کہ سپریم کورٹ کے سارے ججز آزاد اور محترم ہیں، صدارتی ریفرنس سننے والے بینچ کے خلاف ن لیگ نے مہم چلائی ہوئی ہیں جس کی مذمت کرتے ہیں، سپریم کورٹ بار کو کسی سیاسی جماعت کا اتحادی نہیں بننا چاہیے، اتحادی ابھی تک حکومت کا حصہ ہیں اور حصہ رہیں گے، اپوزیشن نے اپنے جلسے کی تاریخ تبدیل کی ہے، امید ہے صرف تحریک انصاف کا جلسہ ہو گا الیکشن کمیشن ہماری اور ن لیگ کے فارن فنڈنگ کیس کا اکھٹا فیصلہ کرے۔

شہباز گل نے کہا کہ ضمیر فروشوں کو ٹکٹ دینا ہمارا غلط فیصلہ تھاچار سال میں عمران خان کے خلاف کوئی کرپشن کی کاغذی ثبوت نہیں ہے، پرانی حکومتوں میں پہلے سال ہی کرپشن کے الزامات لگتے تھے۔

حماد اظہر نے کہا کہ ایک طرف ضمیر فروش کھڑے ہیں اور ایک طرف اسی عدالت کا سرٹیفائیڈ صادق آمین کھڑا ہے یہ حملہ سیاست نہیں بلکہ معیشت پر بھی حملہ ہے، اداروں کو بد نام کرکے مراعات حاصل کرنا ن لیگ کا وطیرہ ہے۔

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More