سیکریٹری جنرل او آئی سی کا مسئلہ کشمیر، فلسطین اور یمن پر تشویش کا اظہار

اسلام آباد: سیکریٹری جنرل او آئی سی حسین ابراہیم نے مسئلہ کشمیر، فلسطین اور یمن پر تشویش کا اظہار کیا۔

اسلامی ممالک کی تنظیم (او آئی سی) کے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے سیکرٹری جنرل او آئی سی حسین ابراہیم نے کہا کہ پاکستان کو او آئی سی اجلاس کی صدارت سنبھالنے پر مبارکباد پیش کرتے ہیں اور کانفرنس کی میزبانی پر پاکستان کے مشکور ہیں جبکہ پاکستان کی ترقی وخوشحالی کے لیے دعاگو ہیں۔

مسئلہ کشمیر پر بات کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ مسئلہ کشمیر حل طلب معاملہ ہے جس کا حل ضروری ہے اور بھارت نے کشمیر کی خصوصی حیثیت تبدیل کرنے کی کوشش کی۔ بھارت کی جانب سے کشمیر کی خصوصی حیثیت تبدیل کرنے کے اقدام پر تشویش ہے۔ کشمیریوں کو اقوام متحدہ (یو این) قراردادوں کے مطابق حق خودارادیت دیا جائے۔

مسئلہ فلسطین پر بھی بات کرتے ہوئے حسین ابراہیم نے کہا کہ فلسطین سے متعلق اسرائیل کی پالیسی پر تشویش ہے جبکہ فلسطینیوں کو بنیادی حقوق سے محروم نہ کیا جائے۔ فلسطین میں اسرائیل جارحیت قابل مذمت ہے۔ انہوں نے کہا کہ ہم خطے میں امن اور استحکام کے خواہاں ہیں اور مسلمان ممالک کو او آئی سی کی سپورٹ کی ضرورت ہے۔ افغانستان میں جاری صورتحال سے نمٹنے کے لیے سب کو کردار ادا کرنا ہو گا جبکہ افغانستان پر او آئی سی اجلاس کامیاب رہا۔

سیکریٹری جنرل او آئی سی نے کہا کہ یمن مسئلے کا پائیدار حل ہونا چاہیے اور یمن میں خونریزی فوری بند ہونی چاہیے کیونکہ یمن تنازعہ سے وہاں کے عوام متاثر ہو رہے ہیں۔

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More