خیبرپختونخوا کے بلدیاتی انتخابات میں پی ٹی آئی کا نام و نشان مٹ گیا

اسلام آباد: سابق وزیراعظم شاہد خاقان عباسی نے کہا ہے کہ چیئرمین نیب کو کرسی سے چمٹے رہنے کی عادت ہے، حکومتی پالیسیوں کے باعث معیشت تباہ اور ہر چیز بند ہورہی ہے۔

اسلام آباد کی احتساب عدالت کے باہر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے سابق وزیراعظم شاہد خاقان عباسی کا کہنا تھاکہ حکومت کی خراب پالیسیوں کے باعث ملک میں اب نا گیس ہے نا ہی بجلی ہے، بھارت میں بجلی کے 1200 اور پاکستان میں 400 یونٹس ہیں، وزیر توانائی کو ایل این جی اور فرنس آئل کی چوری کا جواب دینا ہوگا۔

شاہد خاقان عباسی نے کہا کہ چیئرمین نیب بتائیں آج تک کتنے سیاستدانوں سے ریکوری ہوئی ہے؟، حکومت کو ساڑھے تین سال ہوگئے، ہمت ہے تو کرپشن کے کیس بھیجیں، حکومت چاہتی ہے کہ ڈیلی ویجز پر یہی نیب کا چیئرمین رہے، خیبرپختونخوا کے بلدیاتی انتخابات میں پی ٹی آئی کا نام و نشان مٹ گیا۔

لیگی رہنما کا کہنا تھاکہ توانائی سمیت دیگر ہر شعبے میں کرپشن ہی کرپشن ہے، آئل ریفائنری بند کردی گئی، حکومت اور نیب کو اوپن چیلنج ہے کہ مقدمے بنائیں اور ثبوت لائیں، جب وقت آئے گا تو ہم درخواست گزار بنیں گے اور پھر پوچھیں گے کہ چینی، دوائیوں، ایل این جی اور فرنس آئل کے ڈاکے کس نے ڈالے۔

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More