پیپلزپارٹی کے رہنما خورشید شاہ کی ضمانت منظور

اسلام آباد: سپریم کورٹ نے پاکستان پیپلزپارٹی کے رہنما خورشید شاہ کی ضمانت منظور کرلی ہے۔ عدالت کا ایک کروڑ رو پے کے ضمانتی مچلکے جمع کرانے کا حکم دیا ہے۔

عدالت نے حکم دیا ہے کہ سید خورشید شاہ کا نام ای سی ایل میں رہے گا۔ سید خورشید شاہ ای سی ایل سے نام نکالنے کے لئے احتساب عدالت سے رجوع کر سکتے ہیں۔ خورشید کو نیب سکھر نے اثاثہ جات کیس میں 18ستمبر 2019 کو حراست میں لیا تھا اور ایک ارب 30 کروڑ روپے کا ریفرنس دائرکیا گیا۔

خورشید شاہ کی اہلیہ، 2 بیٹے، بھتیجے صوبائی وزیر ٹرانسپورٹ سمیت 18افراد ریفرنس میں نامزد تھے۔ عدالت نے 70 روزہ جسمانی ریمانڈ کے بعد خورشید کو 19 نومبر 2019 کو جیل بھیجا۔ انہیں این آئی سی وی ڈی میں زیر حراست رکھنے کے احکامات جاری کیےگئے تھے۔

خورشید شاہ سینٹرل جیل سکھر میں حاضری کے بعد 19نومبر کو ہی این آئی سی وی ڈی سکھر منتقل ہوگئے۔ خورشید شاہ کی جانب سے ضمانت کے لیے سندھ ہائی کورٹ سکھر بینچ میں درخواست دائر کی۔عدالت نے درخواست مسترد کرتے ہوئے معاملہ نیب کورٹ کو بھیج دیا تھا۔

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More