کھانے میں نمک چیک کرنے کیلئے الیکٹرک چاپ اسٹکس تیار

ٹوکیو: کھانوں میں مزا مصالحوں سے ہی آتا ہے، اور اگر نمک کم یا زیادہ ہو جائے تو یہ سواد خراب ہو جاتا ہے، اسی لیے ماہرین نے الیکٹرک چاپ اسٹکس تیار کی ہیں جو کھانے میں نمک کا ذائقہ دیں گی۔

جاپان میں سائنسدانوں نے کھانے میں نمک کو شامل کرنے کی ضرورت کو ہی ختم کردیا ہے۔ ماہرین کا کہنا ہے کہ یہ دنیا کی پہلی ایجاد ہو گی جس کے بعد کھانوں میں نمک کی ضرورت ہی نہیں رہے گی۔ چاپ اسٹکس ایک منی کمپیوٹر ویئر ایبل پر کام کرتی ہے جو کھانے والے کی کلائی پر بندھا ہوتا ہے۔ اور اس کا مقصد جاپان کے مقبول ترین کھانوں میں نمک کی مقدار کو کم رکھنا ہے۔

ٹوکیو کی میجی یونیورسٹی کے ماہرین کا کہنا ہے کہ ڈیوائس سوڈیم ائیون ٹرانسمٹ کرتی ہے ، جس سے چاپ اسٹکس سے منہ میں نمکیات محسوس ہوتی ہیں۔ تجربات کے مراحل سے گزر کر اگلے سال صارفین کو یہ چوپ اسٹکس دستیاب ہوں گی۔

تاہم طبی ماہرین کی ریسرچز کے مطابق غذا میں نمک کا زیادہ استعمال ہائی بلڈ پریشر سمیت متعدد امراض کا باعث بن سکتا ہے۔ اور جاپان میں ایک بالغ فرد اوسطاً روزانہ 10 گرام نمک استعمال کرتا ہے جو عالمی ادارہ صحت کی تجویز کردہ مقدار سے دگنا زیادہ ہے۔

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More