مریم نواز کی درخواست عدالت کے ساتھ دھوکہ دہی کے مترادف ہے، نیب

اسلام آباد: نیب نے ایون فیلڈ ریفرنس میں احتساب عدالت کے فیصلے کے خلاف مریم نواز کی اسلام آباد ہائیکورٹ میں دائر اپیل خارج کرنے کی استدعا کردی۔ نیب کی جانب سے موقف اپنایا گیا ہے کہ لیگی رہنما کی بریت کی درخواست ناقابل سماعت ہے جس میں بیان کیے گئے حقائق درست نہیں۔

ایون فیلڈ ریفرنس میں احتساب عدالت کے فیصلے کے خلاف مریم نواز کی بریت کی درخواست پر نیب کی جانب سے جواب اسلام آباد ہائیکورٹ میں جمع کرادیا گیا۔ نیب نے اپنے جواب میں مریم نواز کی اپیل خارج کرنے اورمثالی جرمانہ عائد کرنے کی استدعا کی ہے۔

نیب نے مؤقف اختیار کیا ہے کہ مریم نواز کی بریت کی درخواست ناقابل سماعت ہے جس میں بیان کیے گئے حقائق درست نہیں، بریت کی درخواست میں لگائے گئے الزامات پر سپریم کورٹ پہلے ہی فیصلہ دے چکی ہے، صاف شفاف ٹرائل کے بعد احتساب عدالت نے ایون فیلڈ ریفرنس میں تمام قانونی تقاضوں کو پورا کرکے سزا سنائی۔

جواب میں کہا گیا ہے کہ مریم نواز کے والد نوازشریف، بھائی حسن اور حسین نواز عدالتی مفرور ہیں، ملزمان نے لندن فلیٹس کی منی ٹریل نہیں دی، نوازشریف بتائیں لندن جائیدایں کیسی خریدیں، پیسہ کیسے منتقل کیا۔

نیب کے جواب میں کہا گیا ہے کہ مریم نواز کی درخواست عدالت کے ساتھ دھوکہ دہی کے مترادف ہے۔ مریم نواز کے نگران جج پر الزامات توہین عدالت کے زمرے پر آتے ہیں۔ پاناما کیس کی سماعت کرنے والے جج ابھی بھی جوڈیشل سروس میں ہیں۔

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More