میاں صاحب علاج کرا کے آئیں فیصلہ ان کا اور ڈاکٹرز کا ہے، شاہد خاقان عباسی

اسلام آباد: سابق وزیراعظم شاہد خاقان عباسی کا کہنا ہے کہمیاں صاحب علاج کی غرض سے گئے تھے ۔علاج کرا کے آئیں فیصلہ ان کا اور ان کے ڈاکٹرز کا ہے۔

ان کا کہنا ہے کہ عمران خان کی 4سال حکومت رہی ہے۔عمران خان جو قرضہ لیے ہیں اس کا حساب دے دیں۔ہم اپنے اوپر لگائے گئے الزامات کا حساب دے رہے ہیں۔ تیل کی قیمتوں سے متعلق انہوں نے کہا ہے کہ تیل کی قیمت اوگرا طے کرتا ہے۔حکومت نے تیل پر کوئی ٹیکس نہیں لگایا ہے۔تیل کی قیمت بڑھانے یا کم کرنے کا نظام ہے۔اس کو ڈی ریگولیٹ کرنے کی ضرورت ہے۔

انہوں نے کہا کہ یہ گزشتہ 30سالوں سے نظام چلا آرہا ہے۔دنیا میں قیمت کو بڑھنے کو سامنے رکھ کر قیمت کا تعین کیا جاتا ہے۔کے الیکٹرک پچھلے تین سال بجلی کو چلا رہے ہیں۔حکومت کے الیکٹرک پر بوجھ نہیں ڈالتی۔

ان کا کہنا ہے کہ شارٹ ٹرم سے کچھ نہیں ہوتا لانگ ٹرم اقدامات کرنے ہوں گے۔کے الیکٹرک کے ساتھ معاملات چل رہے ہیں۔4سال کی غفلت کا اثر عوام پر کچھ عرصہ رہے گا۔

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More