پی ٹی وی پارلیمنٹ حملہ کیس: 11 ملزمان کی بریت کی درخواست پر فیصلہ محفوظ

اسلام آباد: انسداد دہشتگردی عدالت نے پی ٹی وی، پارلیمنٹ حملہ کیس میں پرویزخٹک، شفقت محمود سمیت 11 ملزمان کی بریت کی درخواست پر فیصلہ محفوظ کرلیا، جو 9 مارچ کو سنایا جائے گا۔

جج محمد علی ورائچ نے پی ٹی وی، پارلیمنٹ حملہ کیس کی سماعت کی۔ وفاقی وزراء اسد عمر اور شفقت محمود سمیت دیگر پیش ہوئے۔ جج نے کیس کے ابتداء پر 11 ملزمان کی حاضری لگانے کی ہدایت کی۔ وفاقی وزیر اسد عمر حاضری لگانے کے بعد عدالت سے چلے گئے۔ پی ٹی آئی رہنماؤں کے وکیل سید محمد علی نے عدالت میں ایف آئی آر پڑھی۔

وکیل نے ملزمان کی مقدمہ سے بریت کی درخواست دائر کرتے ہوئے موقف اپنایا کہ مرکزی ملزم عمران خان کو بری کرنے کے حکم نامے کو ڈیڑھ سال گزر گیا، دیگر ملزمان ضمانت پر ہیں انہیں بھی بری کیا جائے۔ وکیل نے کہا کہ پولیس نے نواز شریف کو مقدمہ سے ڈسچارج کر دیا تھا، مقدمہ کی کاپی اور ڈسچارج کا حکم نامہ درخواست کے ساتھ لف ہے۔

پراسیکیوٹر فاخرہ سلطان کا کہنا تھا کہ پراسیکیوشن کو ملزمان کو بری کرنے میں کوئی اعتراض نہیں ہے۔ عدالت نے بریت کی درخواستوں پر فیصلہ محفوظ کرتے ہوئے 9 مارچ کو سنانے کا کہہ دیا۔

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More