حکومت کی عدالت سے اسحاق ڈار کی سینیٹ میں نشست خالی قرار دینے کی استدعا

اسلام آباد: وفاق نے سپریم کورٹ سے مسلم لیگ ن کے رہنما اسحاق ڈار کی سینیٹ میں نشست خالی قرار دینے کی استدعا کردی۔

اسحاق ڈار کی نااہلی سے متعلق کیس کی سماعت سپریم کورٹ میں ہوئی۔ ایڈیشنل اٹارنی جنرل عامر خان نے عدالت میں مؤقف اختیار کیا کہ حکومت نے اراکین پارلیمنٹ کے حلف کے حوالے سے نیا قانون بنایا ہے، نئے قانون کے تحت 60 دن میں حلف نہ اٹھانے پر نشست خالی تصور ہوگی۔

ان کا کہنا تھا کہ اپیل میں ن لیگ کا مؤقف ہے کہ سپریم کورٹ نے اسحاق ڈار کا نوٹیفکیشن معطل کر رکھا ہے، سپریم کورٹ نے بار بار اسحاق ڈار کو طلب کیا لیکن وہ پیش نہ ہوئے، اسحاق ڈار نے نوٹس کے باوجود پیش نہ ہونے کی کوئی وجہ نہیں بتائی، ن لیگ کہتی ہے کہ نوٹیفکیشن معطل ہونے کی وجہ سے اسحاق ڈار واپس نہیں آرہے لہذا سینیٹ میں اسحاق ڈار کی نشست کو خالی قرار دیا جائے۔

جسٹس اعجازالاحسن نے کہا کہ کیس کو آئندہ ہفتے سماعت کیلئے مقرر کردیتے ہیں عدالت نے اسحاق ڈار نااہلی کیس آئندہ ہفتے تک ملتوی کردیا۔

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More