پنجاب اسمبلی کا ماحول کشیدہ، ڈپٹی اسپیکر پر دھاوا بول دیا

لاہور: پنجاب اسمبلی کا اجلاس شروع ہونے سے قبل ہی ماحول کشیدہ ہوگیا ہے اور حکومتی اراکین نے ایوان کے اندر لوٹے اچھال دیے ہیں۔

وزیراعلیٰ پنجاب کے انتخاب کیلیے پنجاب اسمبلی کا اجلاس باقاعدہ شروع ہونے سے قبل ہی ماحول کشیدہ ہوگیا ہے اور حکومتی اراکین نے ایوان کے اندر لوٹے اچھال دیے ہیں۔ حکومتی اراکین نے اسمبلی میں منحرف اراکین کی آمد پر لوٹے لوٹے کے نعرے بھی لگائے جب کہ ایوان میں لوٹے اچھالنے کے ساتھ اسپیکر کی ڈائس پر بھی لوٹا رکھ دیا ہے۔

ڈپٹی اسپیکر ابھی اپنی کرسی پر بیٹھ بھی نہ پائے تھے کہ حکومتی ارکان نے دھاوا بول دیا، سیکیورٹی ارکان فوری طور آگے بڑھے اور اسپیکر کو حفاظت میں لیکر چیمبر میں لے گئے، ہنگامی آرائی کے باعث اجلاس رک گیا۔ حکومتی ارکان نے ڈپٹی اسپیکر دوست مزاری کے بال بھی نوچے، حکومتی ارکان نےڈپٹی اسپیکر کے باہر جانے کے بعد وکٹری کا نشان بنایا۔

حکومتی اراکین کی جانب سے لوٹے اچھالے اور نعرے لگائے جانے کےبعد اپوزیشن اراکین کی جانب سے بھی نعرے بازی شروع ہوگئی اور ایوان مچھلی بازار کا منظر پیش کرنے لگا۔ واضح رہے کہ آج پنجاب اسمبلی میں نئے وزیراعلیٰ پنجاب کا انتخاب ہونا ہے جس کیلیے اجلاس شروع ہوگیا ہے۔

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More