خیبرپختونخوا میں سات روزہ انسداد پولیو مہم جاری

پشاور: خیبر پختونخوا میں سات روزہ انسداد پولیو مہم جاری ہے۔ ٹانک میں ایک اور پولیس اہلکار کی شہادت کے بعد پولیو ورکرز کی سیکیورٹی مزید بڑھادی گئی۔

پشاور سمیت خیبرپختونخوا میں سات روزہ انسداد پولیو مہم کامیابی جاری ہے۔ ٹانک میں ایک ہفتے کے دوران پولیو ٹیم پر دوسری بار حملے میں ایک اور پولیس اہلکار کی شہادت کے بعد پولیو ٹیموں کی سیکیورٹی میں مزید اضافہ کر دیا گیا۔

صوبائی وزیر تیمور جھگڑا کہتے ہیں کہ اس طرح کے حملوں سے ہمارے حوصلوں کو پست نہیں کیا جا سکتا۔ پولیو مہم کے حوالے سے ڈپٹی کمشنر پشاور کپٹن رخالد محمود کی صدارت میں ہونے والے اجلاس میں مختلف علاقوں میں انکاری والدین کو قائل کرنے کے علاوہ شہر کے داخلی و خارجی راستوں، اسکولوں، ٹرانسپورٹ اڈوں اور دیگر مقامات پر بچوں کو پولیو کے قطرے پلانے کا فیصلہ کیا گیا۔

خیبرپختونخوا میں پولیو مہم کے دوران 64 لاکھ سے زائد بچوں کو پولیو قطرے پلانے کاہدف مقررکیا گیا ہے جس کیلئے 45 ہزار سیکیورٹی اہلکار تعینات ہیں۔

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More