حمزہ شہباز نے رمضان شوگر ملز کیس میں بریت کیلئے درخواست دائر کردی

لاہور: پنجاب اسمبلی میں اپوزیشن لیڈر حمزہ شہباز نے رمضان شوگر ملز کیس میں بریت کیلئے درخواست دائر کردی۔ لاہور کی احتساب عدالت نے حمزہ شہباز کی حاضری معافی کی درخواست منظور کر لی جبکہ بریت کی درخواست پر نیب کو نوٹس جاری کردیے۔

مسلم لیگ ن کی جانب سے نیب آرڈیننس کے تحت بریت کی پہلی درخواست آگئی۔ نائب صدر ن لیگ حمزہ شہباز نے رمضان شوگر مل کیس میں بریت کیلئے احتساب عدالت میں درخواست دائر کردی۔ آشیانہ اقبال، رمضان شوگر ملز اور منی لانڈرنگ کیس میں شہباز شریف کی احتساب عدالت میں پیش جبکہ حمزہ شہباز نے ایک دن کی حاضری سے استثنیٰ مانگ لیا۔

دوران سماعت راؤ اورنگزیب ایڈووکیٹ نے حمزہ شہباز کی ایک روز کی حاضری معافی اور نیب ترمیمی آرڈیننس 2021 کے تحت بریت کی درخواستیں دائر کیں جس میں مؤقف اپنایا گیا کہ نیب ترمیمی آرڈیننس اور ابتک قلمبند کئے گئے گواہوں کے بیانات کے تحت جرم ثابت نہیں ہوتا لہذا عدالت حمزہ شہباز کو رمضان شوگر ریفرنس سے بری کرنے کا حکم دیا جائے۔ عدالت نے درخواست بریت پر نیب کو نوٹس جاری کردیے۔

احتساب عدالت کے جج ساجد علی نے آشیانہ اقبال اور رمضان شوگر ملز کیس پر مزید سماعت 20 دسمبر تک ملتوی کردی۔ شہباز شریف سمیت منی لانڈرنگ ریفرنس کے دیگر ملزمان نے احتساب عدالت میں حاضری مکمل کروائی۔ وکیل نے ہوئے بتایا کہ قریبی رشتہ دار کی شادی کی تقریب میں شرکت کے باعث حمزہ شہباز پیش نہیں ہوئے جبکہ شہباز شریف خاندان کے اثاثے منجمد کرنے کے خلاف دائر اعتراضات پر وکلا کو بحث کیلئے 20 دسمبر کو دوبارہ طلب کرلیا گیا ہے۔

سماعت سے قبل میڈیا سے غیر رسمی گفتگو میں شہبازشریف کا کہنا تھا کہ مہنگائی کی لہر نے ہر گھر کو تباہ حال کردیا۔ صدر مسلم لیگ ن کا کہنا تھا کہ ملکی تاریخ میں کبھی اتنی قیامت خیز مہنگائی نہیں آئی، آج لوگ ایک وقت کی روٹی کو ترس گئے ہیں۔

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More