مشترکہ مفادات کونسل نے نئی مردم شماری کرانے کی منظوری دے دی

اسلام آباد: مشترکہ مفادات کونسل نے نئی مردم شماری کرانے کی منظوری دے دی۔

وزیر اعظم عمران خان کی زیرصدارت مشترکہ مفادات کونسل کا 49 واں اجلاس ہوا۔ اجلاس کے بعد جاری کردہ اعلامیہ میں کہا گیا کہ مشترکہ مفادات کونسل نے ساتویں مردم شماری کی منظوری دے دی ہے۔ مشترکہ مفادات کونسل نے مردم شماری مانیٹرنگ کمیٹی کے قیام کی بھی منظوری دی۔

وزیر اعظم عمران خان نے مشترکہ مفادات کونسل کے مستقل سیکریٹریٹ کے قیام پر ارکان کو مبارکباد دیتے ہوئے کہا کہ مستقل سیکریٹریٹ وفاقی اور صوبائی حکومتوں کے درمیان تعاون کے جذبے کو ظاہر کرتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ تمام وفاقی اکائیوں اور اسٹیک ہولڈرز کی مشاورت سے قومی مسائل کے حل کے لیے پرعزم ہیں۔ کمیٹی کی سربراہی ڈپٹی چیئرمین پلاننگ، چیف سیکریٹریز اور چیئرمین نادرا و دیگر کریں گے۔

کمیٹی مردم شماری کی سرگرمیوں کی نگرانی کرے گی۔ وزیر اعظم عمران خان نے کہا کہ صوبوں کے مطالبات کے مطابق کونسل کے اجلاسوں کی تعداد میں اضافہ کیا جا سکتا ہے۔ ایڈوائزری کمیٹی کی سفارشات کے مطابق ڈیجیٹل ٹیکنالوجی کے ذریعے مردم شماری کا فیصلہ کیا گیا ہے اور خانہ شماری مردم شماری سے قبل کرائی جائے گی۔

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More