مہنگائی صرف پاکستان نہیں بلکہ پوری دنیا کا مسئلہ ہے، عمران خان

میانوالی: وزیر اعظم عمران خان نے کہا ہے کہ مہنگائی صرف پاکستان نہیں بلکہ پوری دنیا کا مسئلہ ہے۔ کرپشن کرنے والوں کو کسی صورت این آر او نہیں ملے گا۔

وزیر اعظم عمران خان نے دورہ میانوالی کے دوران جلسے سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ کورونا اور لاک ڈاؤن کی وجہ سے مہنگائی میں اضافہ ہوا اس کے باوجود پاکستان اب بھی دنیا کا سستا ترین ملک ہے۔ انہوں نے کہا کہ اس وقت مشکل صورتحال ہے تاہم 3 سے 4 ماہ میں مہنگائی ختم ہو گی۔ کم آمدنی والوں کو آٹا، گھی اور دالوں پر 30 فیصد سبسڈی دیں گے۔

عمران خان نے کہا کہ آزاد ہو کر بھی ہمیں غلامی کرنی پڑی اور ہم اپنے آزاد فیصلے نہیں کر سکتے تھے۔ ہم نے وعدہ کیا تھا کہ پاکستان وہ ملک بنے گا جو کسی کے سامنے سر نہیں جھکائے گا۔ اب آگے پاکستانی قوم کے مفاد میں فیصلے ہوں گے۔ انہوں نے کہا کہ کرپشن کرنے والوں کے ساتھ کسی صورت مفاہمت نہیں ہو گی اور کرپشن کرنے والے سن لیں انہیں این آر او نہیں ملے گا۔

وزیراعظم نے کہا کہ کمزور خاندانوں کو سود کے بغیر 5 لاکھ روپے تک قرض دیں گے اور 20 لاکھ کمزور خاندانوں کے لیے بلاسود قرضے دے رہے ہیں۔ حکومت کے 5 سال پورے ہونے کے بعد میانوالی کی ترقی نظر آئے گی۔ جب میرے ساتھ کوئی نہیں تھا تو میانوالی کے کارکنوں نے ساتھ دیا۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان کے قبائلی علاقے پیچھے رہ گئے اور ان قبائلی علاقوں کے لیے ماضی میں کچھ نہیں کیا گیا۔ اب ہم پسماندہ علاقوں کی ترقی کے لیے کام کریں گے۔ میانوالی میں نمل یونیورسٹی اقتدار کے بعد نہیں پہلے سے بن رہی ہے اور نمل یونیورسٹی کی تعمیر کے لیے میں نے پیسے اکھٹے کیے۔

وزیر اعظم نے کہا کہ میانوالی میں 5 سال کے دوران ریکارڈ ترقی ہو گی اور میانوالی کے لوگوں کی خدمت کر کے احسان کا بدلہ چکاؤں گا۔ وعدہ ہے پاکستان وہ ملک بنے گا جو کسی کے سامنے نہیں جھکے گا۔ انہوں نے کہا کہ اپنا گھر بنانے کے لیے 27 لاکھ روپے بلاسود قرض فراہم کیا جائے گا اور ہر خاندان کے پاس صحت کارڈ ہو گا جو 10 لاکھ روپے تک علاج کی سہولت دے گا۔ پہلی بار بڑی رقم نوجوانوں کی تعلیم اور اسکالر شپس پر خرچ ہو رہی ہے اور حکومت 62 لاکھ لوگوں کو اسکالر شپس دے گی۔

مہنگائی پر بات کرتے ہوئے عمران خان نے کہا کہ دنیا میں فوڈ سپلائی چین کورونا سے متاثر ہوئی اور مہنگائی ہو گئی اور اسی مہنگائی کی وجہ سے بنیادی اشیا خورونوش کی قیمتیں بڑھ گئیں۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان میں مختلف نظریات کے حامل تمام لوگوں سے بات کرنے کو تیار ہیں اور بلوچستان کے ناراض لوگوں سے بھی بات کرنے کے لیے تیار ہیں لیکن کرپشن میں ملوث اور عوام کا پیسہ باہر لے جانے والوں سے ہر گز بات نہیں ہو گی۔

وزیر اعظم نے کہا کہ جب چوری کو گناہ نہیں سمجھا جائے گا وہ معاشرہ ترقی نہیں کر سکے گا۔ رسول ﷺ نے فرمایا تھا میری بیٹی بھی چوری کرے گی تو سزا ملے گی۔ جو قوم بڑے ڈاکوؤں سے ڈیل کرتی ہے وہ تباہ ہو جاتی ہے۔ انہوں نے کہا کہ سولر ٹیوب ویلز کوعام کرنے کے لیے اقدامات کریں گے۔ مہنگی بجلی کے معاہدے ہماری حکومت میں آنے سے پہلے ہوئے تھے۔

اس سے قبل وزیر اعظم عمران خان کو میانوالی پہنچنے کے بعد مختلف منصوبوں پر بریفنگ دی گئی اس موقع پر ان کے ہمراہ وزیر اعلیٰ پنجاب عثمان بزدار بھی موجود تھے۔ وزیر اعظم نے بلکسر میانوالی روڈ کا سنگ بنیاد رکھا۔ وزیر اعظم عمران خان نے میانوالی کے لیے 35 ارب 92 کروڑ روپے سے زائد کے 23 منصوبوں کا سنگ بنیاد بھی رکھا۔ جس میں صحت، تعلیم اور شاہراہوں کے منصوبے شامل ہیں۔ منصوبوں میں کالا باغ سے شکر درہ تک سڑک کی اپگریڈیشن شامل ہے۔

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More