وزیر اگر اچھا کام نہیں کریں گے تو میں کیا کرسکتا ہوں

اسلام آباد: وزیراعظم نے ٹاپ 10 وزارتوں کا اعلان کردیا۔ وزیرمواصلات مراد سعید کی وزارت کا کارکردگی میں پہلا نمبرآیا ہے۔ اسدعمرکی وزارت اقتصادی امورکا دوسرا نمبر ہے۔

ثانیہ نشتر کی وزارت تخفیف غربت کا تیسرا، دوسرا۔شفقت محمود کی وزارت تعلیم چوتھے، شیریں مزاری کی وزارت انسانی حقوق پانچویں، خسروبختیار کی وزارت صنعت وپیداوارچھٹے نمبر پرآئی، مشیر قومی سلامتی معید یوسف کی قومی سلامتی ڈویژن ساتویں، مشیرتجارت رزاق دائود کی وزارت کامرس اینڈ تجارت آٹھویں، شیخ رشید کی وزارت داخلہ نویں فخرامام کی وزارت فوڈ سیکیورٹی کارکردگی میں دسویں نمبر پرآئی ہے۔

شاہ محمود قریشی کی وزارت خارجہ۔۔فواد چوہدری کی وزارت اطلاعات۔شوکت ترین کی وزارت خزانہ کارکردگی کی بنیاد پر ٹاپ ٹین میں جگہ نہیں بنا سکی۔ وزارت ریلوے، بحری امور، وزارت توانائی، وزارت سائنس اینڈ ٹیکنالوجی، وزارت دفاع اور موسمیاتی تبدیلی بھی وزیراعظم کو متاثر کرنے میں ناکام رہیں۔

وزیر اعظم نے تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ وزیر اگر اچھا کام نہیں کریں گے تو میں کیا کرسکتا ہوں، مرادسعید سب سے کم عمر اور سب سے اچھے وزیرہیں، جو مبارکباد کے مستحق ہیں۔ ان کا کہنا ہے کہ وزارتوں نے بہترین کارکردگی کا مظاہرہ کیا۔ تعریفی اسناد سے آئندہ بھی وزارتو ں کی کارکردگی بہتر ہوگی۔ وزارتوں کو اسناد ان کی اچھی کارکردگی پر دینا مثبت کام ہے۔ دیگر وزراسے بھی کہوں گا محنت کریں۔

عمران خان نے کہا کہ دنیا میں وزارت ہو یا شعبے سب میں سزااور جزاکا نظام ہونا چاہیے۔ لوگ نجی اسپتالوں کا رخ اس لیے کرتے ہیں کہ یہاں سزا جزا کا قانون نہیں۔سزا اورجزا کے بغیر نظام نہیں چل سکتا۔ پرائیویٹ سیکٹر میں سرٹیفکیٹ بہترین کارکردگی پردیئے جاتے ہیں۔ ان کا کہنا ہے کہ بیوروکریسی میں کارکردگی کی بہتری کے لیے مراعات دینے چاہیئیں۔ بہترین کارکردگی کامظاہرہ کرنیوالی وزارتوں کومراعات دی جائیں گی۔

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More