‏تباہی سرکار کے تین سالوں میں چینی کی قیمتیں 200 فیصد تک بڑھ گئیں

اسلام آباد: نائب صدر پیپلز پارٹی سینیٹر شیری رحمان کا کہنا ہے کہ ‏تباہی سرکار کے تین سالوں میں چینی کی قیمتیں 200 فیصد تک بڑھ گئی ہیں، ہر ناکامی کا الزام اپوزیشن پر ڈالنے والا بیانیہ پرانا ہو چکا ہے۔

سینیٹر شیری رحمان نے کہا کہ چینی 53 روپے سے 160 روپے فی کلوہوگئی ہے، حکومت ہمیشہ کی طرح اپوزیشن پر الزام لگا کر ذمہ داری سے بچنے کی کوشش کر رہی ہے، شوگر کمیشن کی انکوائری رپورٹ کا کیا ہوا؟، کہاں کیس چلا، کس کو سزا ملی، کون جیل گیا ‏رپورٹ بنا کر کہتے تھے ہم نے ورلڈ کپ جیت لیا ہے۔

انہوں نے مزید کہا کہ کرپشن ثابت ہونے کے باوجود کسی کو سزا نہ ملنے کا مطلب ہے کہ حکومت خود ملوث ہے، ان سے نا ملک چلتا ہے نا ہی مہنگائی کنٹرول میں ہوتی ہے، اب کارکردگی دکھانا ہوگی یا گھر جانا ہوگا۔

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More