حکومت کی کرپشن کے باعث ملک میں مہنگائی کا طوفان ہے

اسلام آباد: سابق وزیراعظم شاہد خاقان عباسی کا کہنا ہے کہ ڈسکہ الیکشن دھاندلی کا کُھرا سیدھا وزیر اعظم اور وزیر اعلیٰ کی جانب جاتا ہے، امید ہے اعلی عدلیہ ڈسکہ الیکشن پر نوٹس لے گی۔

اسلام آباد کی احتساب عدالت کے باہر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے سابق وزیراعظم شاہد خاقان عباسی کی حکومت اور چیئرمین نیب پر لفظی گولہ باری کی۔ انہوں نے کہا کہ شوگر ملز کے مالکان کابینہ کی میز پر ہوتے ہیں، کیا شوگر اسکینڈل کا جواب عمران خان کے پاس ہے، من پسند لوگوں کے نام ریفرنس سے نکال دیئے جاتے ہیں۔

لیگی رہنما کہتے ہیں کہ ادویات اسکینڈل میں میرا نام آرہا ہے تو میرے خلاف پرچہ کاٹ دو،وزیراعظم نے چوری پر عامر کیانی کو نکالا چیئرمین نیب نے اسکو کلیئر کر دیا، چینی چور کابینہ کی کرسیوں پر براجمان ہیں، حکومت کی کرپشن کے باعث ملک میں مہنگائی کا طوفان ہے۔ انہوں نے کہا کہ نیب کی کارروائیوں کے باعث کوئی افسر فیصلہ کرنے کو تیار نہیں ہے، نیب کی وجہ سے اس ماہ گیس کی مد میں 25 ارب روپے کا نقصان اٹھانا پڑا۔

شاہد خاقان عباسی کا کہنا تھاکہ ایک وزیراعظم کو اقامہ رکھنے پر نکلا جاسکتا ہے تو کیا اسطرح الیکشن میں سازش کرنے والوں کے بارے عدالتیں فیصلہ کریں گی، ڈسکہ الیکشن دھاندلی کا کُھرا سیدھا وزیر اعظم اور وزیر اعلی کی جانب جاتا ہے، امید ہے اعلی عدلیہ ڈسکہ الیکشن پر نوٹس لے گی۔

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More