تازہ ترین
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی غیر قانونی محاصرے اور لاک ڈائون کو گیارہ ماہ مکمل

مقبوضہ کشمیر میں بھارتی غیر قانونی محاصرے اور لاک ڈائون کو گیارہ ماہ مکمل

سری نگر: (06 جولائی 2020) مقبوضہ کشمیر میں بھارتی غیر قانونی محاصرے اور لاک ڈائون کو گیارہ ماہ مکمل ہوگئے۔اس دوران بھارت نے مظلوم کشمیریوں پر ظلم اور بربریت کی انتہا کردی۔قابض افواج نے ایک سو بانوے نہتے کشمیریوں کو شہید اور ایک ہزار تین سو چھبیس کو زخمی کیا۔نو سو سے زائد گھروں کو تباہ کردیا گیا۔مزاحمت کے استعارہ بربان وانی کی چوتھی برسی کے موقع پر کشمیریوں کا حوصلہ پہلے سے زیادہ مضبوط ہے۔

مقبوضہ کشمیر کو دنیا کی سب سے بڑی جیل بنے گیارہ ماہ مکمل ہوگئے۔بھارت کی جانب سے گزشتہ سال پانچ اگست کو نافذ کیے گئے غیر قانونی محاصرے اور لاک ڈائون کے یہ گیارہ ماہ مظلوم کشمیریوں کے لیے کسی عذاب سے کم نہیں تھے۔کشمیری میڈیا کی رپورٹ نے گیارہ ماہ کے دوران قابض افواج کی جارحیت پوری دنیا کے سامنے آشکار کردی۔

رپورٹ کے مطابق ہٹلر مودی کے اشاروں پر ناچنے والی قابض بھارتی فوج نے نام نہاد آپریشنز کی آڑ اور پرامن مظاہرین پر فائرنگ کر کے خواتین سمیت ایک سو بانوے کشمیریوں کو شہید جبکہ ایک ہزار تین سو چھبیس کو زخمی کیا۔نو سو پینتیس گھروں کو تباہ جبکہ ستتر خواتین کی عزت کو تار تار کیا گیا۔انٹرنیٹ اور مواصلات کے دیگر ذرائع کی بندش سے کشمیری ایک دوسرے کی خیریت جاننے سے بھی قاصر ہیں۔

کشمیری نہیں جانتے کہ ظلم کی اس طویل رات کی صبح کب ہوگی لیکن ان کی مزاحمت جاری ہے۔ نوجوان برہان وانی کی شہادت کے چار برس مکمل ہونے پر کشمیریوں کی مزاحمت میں مزید شدت آگئی ہے۔ظالم بھارتی فوج نے چار سال قبل برہان وانی کو اپنے راستے سے ہٹا تو دیا لیکن اب نوجوانوں کی ایک نئی نسل تیا ہوگئی ہے جن کے دلوں میں اپنے ہیرو برہان وانی کی طرح آزادی کا آلائو روشن ہے۔

چاہے بھارت فوج مظلوم کشمیریوں پر کتنے ہی مظالم ڈھائیں لیکن اب یہ آلاؤ بجھے گا نہیں۔ برہان وانی کی چوتھی برسی کے موقع پر وادی بھر میں وانی کے بڑے بڑے پوسٹرز آویزاں ہیں جو چیخ چیخ کر بھارتی فوج کو یہ بتاتے ہیں کہ کشمیری اپنے شہدا کو نہ کبھی بھولیں ہیں اور نہ ہی بھولیں گے۔

Comments are closed.

Scroll To Top