تازہ ترین
مبارک ولیج پر غوطہ خوروں نے وہیل شارک کے ساتھ ڈائیونگ کی ویڈیو بنالی

مبارک ولیج پر غوطہ خوروں نے وہیل شارک کے ساتھ ڈائیونگ کی ویڈیو بنالی

کراچی: (05 جون 2020) مبارک ولیج پر غوطہ خوروں نے وہیل شارک کے ساتھ ڈائیونگ کی ویڈیو بنالی۔

مبارک ولیج پر یاسر اور ظہیر بلوچ نامی نوجوانوں نے وہیل شارک کے بچے کے ساتھ سمندر میں ڈائیونگ کی ویڈیو بنالی۔ دونوں غوطہ خوروں نے ہمت اور مہارت کے ساتھ یہ سارا منظر ریکارڈ کیا، پاکستان میں یہ ریکارڈنگ اپنی نوعیت کا پہلا واقعہ ہے، ترقی یافتہ ممالک میں اس طرح کی ریکارڈنگ پر غوطہ خوروں کی حوصلہ افزائی کی جاتی ہے۔

ورلڈ وائلڈ لائف فنڈ پاکستان کے حکام کے مطابق وہیل شارک دنیا کی سب سے بڑی مچھلیوں میں سے ایک ہے جبکہ کونسلر مبارک ولیج کا کہنا ہے کہ پہلی بار مقامی لوگوں نے زیر آب ویڈیو بنائی ہے۔ تکنیکی مشیر ڈبلیو ڈبلیو ایف پاکستان معظم خان کا کہنا تھا کہ یہ وہیل شارک ہے اور دنیا کی سب سے بڑی مچھلی ہے، وہیل شارک کے ساتھ ڈائیونگ کی ویڈیو پہلی بار دیکھی ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ غوطہ خور غیر محفوظ طریقے سے وہیل کے ساتھ ڈائیونگ کررہے تھے، جسامت میں بڑی ہونے کے باعث یہ غوطہ خوروں کو نقصان پہنچا سکتی تھی۔ واضح رہے کہ غوطہ خوروں کی جانب سے یہ ویڈیو مبارک ولیج سے چند کلو میٹر کے فاصلے پر واقع چرنا آئی لینڈ پر بنائی گئی ہے، چرنا آئی لینڈ کے اطراف نایاب نسل کے وہیل، کچھوے، ڈولفن اور دیگر مچھلیاں پائی جاتی ہیں۔

ہٹلر مودی کے دیس میں بھی پولیس اہلکار کی دہشتگردی اور امریکی سیاہ فام جارج فلائیڈ جیسا واقع سامنے آگیا۔۔ بھارتی شہر جودھ پور میں ظالم پولیس اہلکار نے ماسک نہ پہننے پر نوجوان کی گردن پر گھٹنا رکھ کر بے رحمی سے مارا پیٹا۔ بھارتی ریاست راجھستان کے شہر جودھ پور میں سفاک پولیس کی درندگی کا واقع اس وقت پیش آیا جب پولیس اہلکار نے بیچ سڑک پر نوجوان کی گردن پر گھٹنا رکھ کر بےدردی سے اس لیے مارا کیونکہ شہری نے ماسک نہیں پہنا ہوا تھا۔

دوسری جانب دس روز قبل امریکی ریاست مینیسوٹا میں سفید فام پولیس اہلکار ، سیاہ فام نوجوان کی گردن پر گھٹنا رکھ کر کافی دیر تک بیٹھا رہا تھا جس کے باعث جارج فلائیڈ کی موت ہوئی تھی۔

Comments are closed.

Scroll To Top