منی لانڈرنگ کیس: شہباز شریف اور حمزہ شہباز کو 07 ستمبر کو حاضری یقینی بنانے کا حکم

لاہور: اسپیشل سینٹرل عدالت نے منی لانڈرنگ کیس میں شہباز شریف، حمزہ شہباز سمیت دیگر ملزموں کو 07 ستمبر کو حاضری یقینی بنانے کا حکم دے دیا۔

لاہور کی اسپیشل سینٹرل عدالت کے جج اعجاز حسن اعوان نے شہباز شریف، حمزہ شہباز کے خلاف منی لانڈرنگ کیس میں گزشتہ سماعت کا تحریری حکم جاری کردیا۔ عدالت نے شہباز شریف، حمزہ شہباز سمیت دیگر ملزموں کو 07 ستمبر کو حاضری یقینی بنانے جبکہ سلمان شہباز کی منقولہ و غیرمنقولہ جائیدادیں قرق کرنے کا حکم دے دیا۔

تفتیشی افسر نے سلمان شہباز اور طاہر نقوی کی منقولہ و غیرمنقولہ جائیدادوں کا ریکارڈ پیش کیا۔ عدالت نے سلمان شہباز کی چنیوٹ میں دو سو کنال زرعی اراضی، سلمان شہباز کے تیرہ کمپنیوں میں شئیرز اور انتیس بینک اکاؤنٹس بھی قرق کرنے کا حکم دیا۔ عدالت نے اشتہاری ملزم طاہر نقوی کے ایک کمپنی میں پانچ ہزار شئیرز قرق کرنے کا حکم دے دیا۔

عدالت نے آئندہ سماعت پر اشتہاری ملزم سلمان شہباز اور طاہر نقوی کی جائیدادوں کی قرقی کی رپورٹ بھی طلب کرلی۔ شہباز شریف کے شریک ملزم ملک مقصود چپڑاسی کی وفات کا مصدقہ سرٹیفکیٹ عدالتی ریکارڈ کا حصہ بنا دیا گیا جبکہ عدالت نے شریک ملزم متوفی ملک مقصود چپڑاسی کے خلاف کیس کارروائی ختم کردی۔ عدالت نے آئندہ سماعت پر وکلا کو بحث کیلئے بھی طلب کرلیا۔

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More