سعید غنی کی سرپرستی میں ایک بڑا نیٹ ورک چل رہا ہے

کراچی: اپوزیشن لیڈر سندھ اسمبلی حلیم عادل شیخ نے کہا ہے کہ سعید غنی صاحب آپ بیس کیس اور کریں فکر نہیں، سعید غنی کی سرپرستی میں ایک بڑا نیٹ ورک چل رہا ہے، بلاول زرداری نے بھی انہیں کھلی چھوٹ دے دی۔

اپوزیشن لیڈر سندھ اسمبلی حلیم عادل شیخ نے صوبائی وزیرسعید غنی کے خلاف سندھ ہائی کورٹ سے رجوع کرلیا۔ درخواست میں سابق ایس ایس پی ڈاکٹر رضوان کی رپورٹ پر جے آئی ٹی بنانے کا مطالبہ کیا گیا۔ ایس ایس پی ڈاکٹر رضوان نے اپنی رپورٹ میں سعید غنی کو منشیات فروش قرار دیا تھا۔

اپوزیشن لیڈر سندھ اسمبلی حلیم عادل شیخ نے سندھ ہائی کورٹ میں میڈیا سے گفتگو میں کہا کہ یہ پٹیشن میری ذات کیلئے نہیں سندھ کی عوام کیلئے ہے، سندھ کی عوام کو منشیات فروشی پر لگادیا گیا ہے جس کے ہاتھ عوام کی جان و مال کا تحفظ ہے۔ وہ منشیات فروشی کررہے ہیں۔

حلیم عادل شیخ کا کہنا تھا کہ ہزاروں پولیس اہلکار ڈرگ پیڈلر ہیں، لیاری، عیسیٰ نگری، ریڑہی گوٹھ، چنیسر گوٹھ منشیات کا گڑھ بنے ہوئے ہیں، رینجرز نے سرور راہوپوٹو کی 76 کلو چرس سی آئی اے کی گاڑی سے پکڑی،
پروسیکیوشن نے ان لوگوں کو رلیف دے دیا۔

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More