سپریم کورٹ کا فیصلہ ہمارے مؤقف کی تائید ہے، مصطفیٰ کمال

کراچی: سربراہ پی ایس پی مصطفیٰ کمال نے کہا ہے کہ سپریم کورٹ کا فیصلہ ہمارے مؤقف کی تائید ہے، کالے قانون کیخلاف سڑکوں پر آنا پڑا۔

سربراہ پی ایس پی مصطفیٰ کمال نے کراچی میں دھرنے کے شرکا سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ 2013 میں ایم کیوایم نے پیپلزپارٹی کے ساتھ شب خون مارا، 2013 میں ایم کیو ایم حکومت میں تھی، ان کے سامنے قانون پاس ہوا، ہڑتالوں والی پارٹی پارٹنر ان کرائم رہی، آج یہ نوبت آگئی ہے کہ کچرا اٹھانے والا کوئی نہیں۔

انہوں نے کہا کہ 2017 سے بلدیاتی اداروں کے اختیارات کیلئے آواز اٹھا رہے ہیں، میئر کراچی کیلئے اختیارات مانگ رہے ہیں، کراچی کے عوام کیلئے 18 روز دھرنے پر بیٹھے رہے، جو ہمارا مذاق اڑتے تھے وہ آج کریڈٹ لے رہے ہیں۔

مصطفیٰ کمال کا کہنا تھا کہ کچھ پارٹیاں مجبور ہو کر ہماری آواز میں آواز ملا رہی ہیں، ہم سندھ کے عوام کے اختیارات کی بات کرتے ہیں، وفاق 56 فیصد پیسہ صوبوں کو دیتا ہے، 56 میں سے 27 فیصد پیسہ سندھ کو ملتا ہے، سندھ کو وفاق سے سالانہ ایک ہزار ارب روپے ملتے ہیں، سندھ کے 70 لاکھ بچے اسکولوں سے باہر ہیں۔

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More